پرویز رشید غریب ترین اور اعظم سوا تی امیر ترین سینیٹرز میں شامل

123

اسلام آباد ( آن لائن ) الیکشن کمیشن آف پاکستان نے ارکان سینیٹ کے مالی سال 19-2018ء کے اثاثوں کی تفصیلات جاری کر دی ہیں ،پاکستان مسلم لیگ (ن) کے پرویز رشید غریب ترین سینیٹرز میں شامل اور تحریک انصاف کے اعظم سواتی ایک ارب 30 کروڑ روپے مالیت کے اثاثوں کے مالک ہونے پر امیر ترین سینیٹر ہیں۔چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی 10 کروڑ روپے کے اثاثوں کے مالک
اور ڈپٹی چیئرمین سلیم مانڈوی والا 26 کروڑ 52 لاکھ روپے کے مالک نکلے۔ الیکشن کمیشن کی جانب سے اثاثہ جات کی تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف کے اعظم سواتی امیر ترین سینیٹرز میں شامل ہیں جو ایک ارب 85 کروڑ 61 لاکھ روپے سے زائد اثاثوں کے مالک ہیں۔سینیٹر تاج آفریدی ایک ارب 30 کروڑ روپے مالیت کے اثاثوں کے مالک نکلے۔(ن)لیگ کے پرویز رشید غریب ترین سینیٹرز میں شامل ہیں جن کے اثاثوں کی مالیت صرف 23 لاکھ روپے ہے۔ چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی 10 کروڑ روپے کے اثاثوں کے مالک ہیں۔ڈپٹی چیئرمین سلیم مانڈوی والا 26 کروڑ 52 لاکھ روپے سے زائد اورقائد ایوان شبلی فراز 23 کروڑ روپے سے زائد اثاثوں کے مالک نکلے۔وزیرقانون فروغ نسیم 48 کروڑ روپے سے زائد مالیت کے اثاثوں کے مالک۔ سینیٹر طلحہ محمود 33 کروڑ 26 لاکھ روپے سے زائد اثاثوں کے مالک ہیں۔ حکومتی رکن فیصل جاوید کے ایک کروڑ 83 لاکھ روپے سے زائد کے اثاثے۔ سینیٹر آصف کرمانی 4 کروڑ 34 لاکھ مالیت کے اثاثوں کے مالک اور سینیٹر ولید اقبال 13 کروڑ روپے مالیت کے اثاثوں کے مالک ہیں۔پیپلز پارٹی کی سینیٹر شیری رحمن 25 کروڑ۔ مشاہداللہ 2 کروڑ 44 لاکھ روپے کے اثاثوں کی ملکیت رکھتے ہیں۔ ڈاکٹر شہزاد وسیم کے 33 کروڑ روپے مالیت کے اثاثے ہیں ۔اپوزیشن لیڈر راجا ظفر الحق کے ایک کروڑ روپے سے زائد مالیت کے اثاثے ہیں،انہوںنے 7 جائدادوں کی مالیت ظاہر نہیں کی۔ رحمن ملک 8 کروڑ۔مصطفی نواز کھوکھر کے 17 کروڑ 47 لاکھ سے زائد مالیت کے اثاثے۔فاروق ایچ نائیک کے 9 کروڑ ۔رضا ربانی 12 کروڑ 32 لاکھ روپے کے اثاثے رکھتے ہیں۔
اثاثے ظاہر