رانا ثنا اللہ کی گرفتاری مکافات عمل ہے، محمد وسیم نقشبندی

102

لاہور (نمائندہ جسارت) پاکستان سنی تحریک کے رہنما محمد وسیم نقشبندی نے کہا ہے کہ رانا ثنا اللہ کا لعدم تنظیموں سے رابطے کسی سے ڈھکے چھپے نہیں ،رانا ثنا اللہ کی گرفتاری مکافات عمل ہے، سسٹم کی کمزوری ہے انہیں بہت پہلے گرفت میں آنا چاہیے تھا، ظلم کی انتہا کرنیوالے بالآخر قانون کے کٹہرے میں آ ہی گئے۔عدالتیں آزاد ہیں، جو چاہے اپنی بے گناہی ثابت کرے، نواز لیگ کی توپوں کا رخ ہمیشہ غلط سمت میں رہا، احتساب سب کا ہونا چاہئے ، کیا رانا ثنا اللہ ماڈل ٹاؤن کیس میں بھی بے گناہ ہیں؟ ، ماڈل ٹاؤن کے 14معصوم لوگوں کے قتل و سیکڑوں افراد پر پولیس گردی کے مقدمات رانا ثنا پر قائم ہیں ،محمد وسیم نقشبندی کا کہنا تھا کہ وزیر قانون بنے پر پنجاب لولیس کو ذاتی فورس کے طور پر استعمال کرتے رہے ہیں اس کی بھی تحققات ہونی چاہئے ، رانا ثنا اللہ کی گرفتاری خوش آئند ہے اس سے اداروں میں خود اعتمادی کی فصا پیدا ہوگی ، جس نے بھی کرپشن یا غلط کام کیا اُسے انجام بھگتنا ہوگا،رانا ثنا اللہ کے متعدد بیانانت نہ صرف آئین پاکستان کے خلاف ہے بلکہ ختم نبوت کی اہمیت کم کرنے کے بارے بھی دے چکے ہیں ،پاکستان کے امن و امان کو خراب کرنے کی منظم کوشش کی ہے،رانا ثنا اللہ نے اسلام ، پاکستان کے آئین سے روح گردانی کی ہے ، قوم قانون شکن شخص کو کسی صورت رلیف نہیں ملنا چاہیے ، رانا ثنا اللہ کے بیان سے امت مسلمہ کے جذبات مجروع ہوئے ہیں۔