سودی نظام اور کرپشن نے ملک کا نظام تباہ کردیا ، سراج الحق

150

 

لاہور(نمائندہ جسارت)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ معاشی نظام کی تباہی کی بنیاد سودی نظام ، مس مینجمنٹ اور بے انتہا کرپشن ہے، پی ٹی آئی ایڈہاک بنیاد پر زیادہ عرصہ حکومت نہیں چلا سکتی ۔مستقبل کے لیے حکومت کے پاس کوئی مستقل نظام ہے نہ وژن ۔ مہنگائی کو کنٹرول نہ کیا گیا تو سیاسی جماعتیں احتجاج کریں یا نہ کریں ، عوام حکومت کے خلاف سڑکوں پر آنے میں دیر نہیں کریں گے ۔ حکمرانوں کو اس دن سے ڈرنا چاہیے
جب بے ہنگم ہجوم ان کے بنگلوں اور ایوانوں کی طرف بڑھنے لگے اور ان کا محاصرہ کرے ۔ جماعت اسلامی نے ابتدا میں ہی سیمینارز اور کانفرنسز کر کے حکومت کو معیشت کی بہتری کے لیے تجاویز دی تھیں مگر نالائق حکومت کو آئی ایم ایف کی غلامی کے سوا کوئی راستہ نہیں سوجھا ۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے منصورہ میں ملک بھر سے آئے وفود سے ملاقات کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ معاشی نظام کی تباہی کی بنیاد سودی نظام ، مس مینجمنٹ اور بے انتہا کرپشن ہے ۔ جب تک حکومت اور حکمران سودی نظام اورکرپشن سے توبہ نہیں کرتے ، انتظامی امور کو بہتر نہیں کرسکتے اور نہ معاشی خوشحالی ممکن ہے ۔ معیشت کو بہتر بنانے کے لیے قابل عمل اقدامات کرنا ہوں گے ۔ اس میں سب سے ضروری سودی نظام اور کرپشن سے توبہ کرنا ہے ۔ انہوںنے کہاکہ جب تک ہم اللہ کے نظام کو اختیار نہیں کرتے ، صرف شور شرابے اور پروپیگنڈے سے مسائل حل نہیں ہوں گے ۔