سالڈویسٹ مینجمنٹ بورڈکو کچرااٹھانے کی صلاحیت میںاضافے کی ہدایت

104

کراچی (اسٹاف رپورٹر) وزیر بلدیات سعید غنی نے کہا ہے کہ شہر میں مون سون بارشوں سے قبل نالوں کی صفائی کا کام مکمل کرلیا جائے اور اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ بارش کے دوران برساتی نالوں میں بارش کے پانی کی نکا سی میں رکاوٹ نہ ہو اور سڑکوں پر بارش کا پانی جمع نہ ہو، شہر کے تمام اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز اپنے اپنے اضلاع کے میونسپل کمشنرز اور سندھ سولڈ ویسٹ مینجمنٹ بورڈ کے افسران کے ساتھ مل کر صفائی ستھرائی اور نکاسی آب میں درپیش مسائل کا ازالہ کریں اور اس حوالے سے جہاں سندھ حکومت کی مدد کی ضرورت ہوئی ہم مکمل تعاون کریں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے منگل کے روز کمشنر کراچی کے دفتر میں ایک اعلیٰ سطح کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں سیکرٹری بلدیات سندھ سیدخالد حیدر شاہ، ایڈیشنل کمشنر کراچی ون احمد علی قریشی،ایم ڈی واٹر بورڈ اسد اللہ خان، ایم ڈی سندھ سالڈ ویسٹ مینجمنٹ بورڈ اے ڈی سجنانی، تمام اضلاع کے ڈپٹی کمشنرزاور دیگر نے شر کت کی۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ بارشوں سے قبل نالوں کی صفائی کے کام کو یقینی بنانے کے لیے ضلعی سطح پر متعلقہ اداروں کے درمیان مشترکہ کوششیں کی جائیں گی۔ تمام ڈپٹی کمشنر ز اپنے اپنے ضلع میں بلدیاتی اداروں کی کارکردگی کو مانٹیر کریں گے۔ اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ سندھ سالڈ ویسٹ مینجمنٹ بورڈ کچرا اٹھانے کے لیے دن رات کام کرے گی اور کچرا اٹھانے کی موجودہ استعداد کو بڑھائے گی۔اجلاس میں صوبائی وزیر نے سندھ سالڈ ویسٹ مینجمنٹ بورڈ اور متعلقہ ضلعی بلدیات اور کنٹونمنٹ بورڈز کے افسران کو ہدایات دی کہ متعلقہ لینڈ فل سائٹس پر کچرا ٹھکانے لگانے کو یقینی بنایا جائے اور اگر کوئی بھی ڈپارٹمنٹ اس میں کوتاہی کا مرتکب پایا گیا اور کچرے کو متعلقہ جگہ کے بجائے کہیں اور ڈمپ کرتا پایا جائے تو اس کی شکایات ڈپٹی کمشنرز کو کی جائے اور ڈپٹی کمشنرز اس کے خلاف تھانے میں ایف آئی آر کا اندراج کرائیں۔ اجلاس میں ضلع وسطی، غربی اور کورنگی میں صفائی کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا اور فیصلہ کیا گیا کہ ان تینوں اضلاع میں کچرا اٹھانے اور نالوں کی صفائی کے لیے ترجیحی کوششیں کی جائیں گی۔ اجلاس میں تمام ضلعی بلدیات کے افسران نے وزیر بلدیات سندھ کو بتایا کہ انہوں نے بارش کے پانی کی نکاسی اور بارشوں کے نقصانات سے بچنے اور شہریوں کو تکلیف سے بچانے کے لیے ہنگامی منصوبے بنا لیے ہیں۔