سعودی عرب کے9ارب90کروڑ ڈالر کے پیکج پر عملدرآمد شروع

132

اسلام آباد(صباح نیوز)سعودی عرب کے9 ارب 90کروڑ ڈالر کے پیکج پر عملدرآمد شروع ہو گیا ہے۔ سعودی حکومت کی طرف سے اعلامیہ جاری کیا گیا ہے جس کے مطابق پیکج پر عملدرآمد کا آغاز پیر سے ہوگیا۔ پاکستان کو سالانہ 3 ارب 20 کروڑ ڈالر کا ادھار تیل دیا جائے گا،ماہانہ 275 ملین ڈالر کا تیل فراہم کیا جائے گا۔ذرائع کے مطابق سعودی عرب کی طرف سے پاکستان کو موخر ادائیگیوں پر تیل کی فراہمی 3 سال تک جاری رہے گی، فراہم کردہ تیل کی مجموعی لاگت 9.90 ارب امریکی ڈالر ہو گی۔یاد رہے کہ سعودی عرب نے اکتوبر 2018ء میں پاکستان کے لیے معاشی پیکج کا اعلان کیا تھا، پاکستان کو دیا
جانے والا پیکج3ارب ڈالر تھا ۔پاکستانی حکام کی جانب سے بتایا گیا تھا کہ سعودی حکومت اسلام آباد کو ایک سال کی موخر ادائیگی کی بنیاد پر تیل فراہم کرنے پر بھی متفق ہو گئی ہے جو 3 ارب ڈالر تک کی اضافی مدد ہے،یہ بندوبست 3برس کی مدت کے لیے ہو گا،دونوں ممالک کے درمیان معاہدے پر دستخط وزیر اعظم عمران خان کے سعودی عرب کے دورے کے موقع پر ہوئے۔ وزیراعظم عمران خان وہاں سرمایہ کاری کانفرنس میں شرکت کے لیے گئے تھے جہاں سعودی عرب نے توازن ادائیگی میں مدد کے لیے ایک برس کے لیے 3 ارب ڈالر کا ڈپازٹ فراہم کرنے کا اعلان کیا تھا، اس سلسلے میں مفاہمت کی یادداشت پر اس وقت کے وزیر خزانہ اسد عمر اور ان کے سعودی ہم منصب محمد عبداللہ جدعان نے دستخط کیے تھے۔
سعودی عرب