آئین میں سزا یافتہ شخص کے پارٹی عہدہ رکھنے پر پابندی نہیں، مریم نواز

57

 

لاہور(نمائندہ جسارت) مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے پارٹی عہدے کے خلاف درخواست پر اپنے تحریری جواب میں کہا ہے کہ آئین اور الیکشن ایکٹ میں ایسی کوئی شرط نہیں ہے کہ سزایافتہ شخص پارٹی کاعہدیدار نہیں ہوسکتا۔الیکشن کمیشن نے مریم نواز کے سیاسی عہدے کے خلاف تحریک انصاف کی درخواست پر سماعت کی۔ مسلم لیگ (ن) کی جانب سے جواب جمع نہ کرایا گیا۔ مسلم لیگ (ن) کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ درخواست گزار نے مریم نواز کی بطور پارٹی نائب صدر تقرری پریس کلپنگز دی ہیں اس سے متعلق نوٹی فکیشن نہیں دیا۔مریم نواز نے اپنے جواب میں کہا ہے کہ آئین اور الیکشن
ایکٹ میں ایسی کوئی شرط نہیں ہے کہ سزایافتہ شخص پارٹی کاعہدیدار نہیں ہوسکتا۔ آمریت میں عوامی نمائندوں کومنتخب کرنے سے روکنے کے لیے اس طرح کے قوانین بنائے جاتے تھے۔ سیاسی جماعتوں کے آرڈر 2002 میں شق رکھی گئی تھی کہ سزا یافتہ شخص پارٹی کا عہدہ نہیں رکھ سکتا۔ پارلیمنٹ نے الیکشن ایکٹ 2017 میں اس شق کو ختم کردیا تھا۔مریم نواز نے اپنے جواب میں مزید کہا ہے کہ سپریم کورٹ کے فیصلوں کا الیکشن کمیشن پر اطلاق نہیں ہوتا۔اس لیے نواز شریف سے متعلق سپریم کورٹ کا فیصلہ یہاں لاگو نہیں ہوتا۔ ملیکہ بخاری اور دیگر درخواست گزار متاثرہ فریق نہیں ہیں اس لیے درخواست ناقابل سماعت ہے اور اسے خارج کیا جائے۔دریں اثناء مریم نواز نے کہا ہے کہ نالائق اور سلیکٹڈ وزیراعظم نے آج ملک کا یہ حال کردیا ہے کہ ترقی رک چکی ہے کاروبار بند ہورہے ہیں اور عوام مہنگائی میں پس رہے ہیں۔ اپنے ویڈیو پیغام میں مریم نواز کا کہنا تھا کہ موٹر وے نواز شریف کی بنائی ہوئی ہے۔ نواز شریف نے پاکستان کا ذرہ ذرہ سجایا اور ملک کو ایٹمی قوت بنایا ہے۔ انہوں نے قوم کی آسانی کے لیے ورلڈ کلاس سڑکیں بنا کر سفر آسان بنایا اور موٹر ویز کے ذریعے صوبوں کو آپس میں جوڑا۔ قوم کے محسن کو کسی گناہ یا جرم کے بغیر جیل کی سلاخوں کے پیچھے پھینکا ہوا ہے۔ ان کا جرم قوم کے لیے کھڑا ہونا اور عوام کا حق حکمرانی کا علم بلند کرنا ہے۔ مریم نواز نے کہا کہ تین مرتبہ کا وزیراعظم عوام کے لیے قید کی سزا بھگت رہا ہے۔ نالائق اور سلیکٹڈ وزیراعظم نے آج ملک کا یہحال کردیا ہے کہ ملکی ترقی رک چکی ہے آج کاروبار رک چکے ہیں اور عوام مہنگائی میں پس رہے ہیں۔ لوگوں کے لیے آسانیاں کرنے والے نواز شریف کے لیے اللہ آسانیاں کرے ا ور انہیں جلد عوام میں واپس لائے۔
مریم نواز