ایمنسٹی اسکیم سے خوف و ہراس کی فضاء کو ختم کرنا ہو گا

107

حیدرآباد ( کامرس ڈیسک) حیدرآباد چیمبر آف اسمال ٹریڈرز اینڈ اسمال انڈسٹری کے صدر محمد فاروق شیخانی نے وفاقی حکومت کی جانب سے جاری کردہ ایمسٹی اسکیم کو اچھا اقدام قرار دیتے ہوئے کہا کہ اِس کی کامیابی کے لیے خوف و ہراس کی فضاء کو پُر امن بنانے اور 30، جون 2019ء کی محدوو مدّت کو آگے بڑھانے سے ہی ہوسکتی ہے، اتنے کم عرصے میں لوگ اِس اسکیم سے فائدہ نہیں اُٹھاسکیں گے۔ لہٰذا ایف بی آر اور وزراء حضرات لوگوں کو اِس اسکیم کی طرف راغب کریں نہ کہ اُن کو خوفزدہ کرنے سے کام لیں۔ لوگوں کی آگاہی کے لیے اویئرنیس پروگرام منعقد کریں جس کے لیے ایمنسٹی اسکیم کی مدت 30، ستمبر تک بڑھادی جائے تاکہ ملک و قوم کو اِس اسکیم سے بھر پور فائدہ اُٹھانے کا موقع میسّر آسکے اور ملکی خزانہ میں بھی خاطر خواہ مالی اضافہ ہو جس میں ہمارے مستقبل کی ترقی پوشیدہ ہے اُمید ہے کہ اِس سے غیر ملکی قرضوں کو بھی چکانے میں آسانی ہو اور ملک کی معیشت کو مثبت سمت حاصل ہوگی اور غیر ملکی قرضوں پر انحصار ختم ہوگا۔ لہٰذا چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی سے مطالبہ کیا کہ ایمنسٹی اسکیم کو بھرپور کامیاب بنانے کے لیے اِس کی آخری تاریخ 30 ستمبر 2019ء تک بڑھائی جائے۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ نے ایک ٹی وی ٹاک میں عوام کو اعتماد میں لینے کے لیے کہا تھا کہ واجب الاداٹیکس قسطوں میں بھی ادا کیا جاسکتا ہے اور ایسی جائیداد جو والدین سے ملی اُس پر ٹیکس میں قسط ہوسکتی ہے۔ لیکن اُنہوں نے یہ واضح نہیں کہا کہ قسطوں کی ادائیگی کا طریقہ کار کیا ہوگا جس کو بھی واضح کرنے کی ضرورت ہے۔