ٹنڈو جام ، مختلف علاقے سیوریج کے پانی میں ڈوب گئے، مکین پریشان

53

 

ٹنڈو جام (نمائندہ جسارت)ٹنڈوجام جام بنگلوز جاگھر اور لیاقت ٹائون میں سیوریج کا گندا پانی گھروں میں داخل، میر پورخاص ہائی وے پر پانی کھڑا، پانی کی نکاسی کے لیے کوئی راستہ نہیں۔ تفصیلات کے مطابق ٹنڈوجام میر پور خاص ہائی وے پر واقع لیاقت ٹائون جام گھر جام بنگلوز کے رہائشی میں سیوریج کے پانی کو نکاس کے لیے راستہ نہ ملنے کی وجہ سے گھروں میں داخل ہو گیا جس کی وجہ سے ان علاقے لوگوں نے رات جاگ کر گزاری علاقے کے لوگوں کے مطابق پہلے سیوریج کا پانی نیو کلیئر انسٹیٹیوٹ ٹنڈوجام کی نہر میں جاتا تھا عدالت عظمیٰ کے احکامات کہ گندا پانی نہروں میں نہ ڈالا جائے تو انہوں نے اپنا نہری سسٹم جدا کر لیا ان کا موقوف ہے کہ گندے پانی کی وجہ سے ان کی زرعی زمین خراب ہورہی ہے اور اس پر تجرباتی لگائے گئے زرعی پلانٹ بھی صحیحپیداوار نہیں دے رہے جس کی وجہ سے انہیں مجبوراً اپنا سسٹم جدا کرنا پڑا جام گھر اور جام بنگلوز کے رہائشیوں کا کہنا ہے پہلے ان کا پانی مگسی گوٹھ کے قریب بنائے گئے تالابوں میں جاتا تھا جب پانی نہر میں ڈالا جانے لگا تو وہ سسٹم ختم ہو گیا اور اُن تالابوں جو ان کے مطابق 6 ایکڑ پر مشتمل تھے قبضہ کر لیا گیا اب معلوم ہوا ہے کہ اس مسئلے کو حل کرنے کے لیے اسی جگہ پر تین ایکڑ اراضی پر دوبارہ تالاب بنائے جارہے ہیں لیکن یہ کام اتنا ست ہو رہا ہے کہ جس کی وجہ ان رہائشی علاقوں کی زندگی اجیرن ہو کے رہ گئی ہے جبکہ بلدیہ کاموقوف ہے کہ ان علاقوں کے پلاٹ کے خریداروں نے پلاٹ خرید تے وقت اس زمین کے مالک سے یہ معلوم ہی نہیں کیا کہ اس کا سیوریج سسٹم کیا ہو گا جس کی وجہ سے انہیں پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہاہے۔ انہوں نے کہا ہے اس مسئلے کے حل کے لیے تالاب بنائے جارہے ہیں جب اس سیوریج کے گندا پانی میر پور خاص ہائی وے پر بھی کھڑا ہے اور روڑ کے کنارے پر موجود ہوٹلوں اور دکانوں میں یہ گندے پانی داخل ہو گیا ہے جس کی وجہ سے لو گوں کو شدید مشکلات سے گزرنا پڑ رہا ہے ۔انہوں نے وزیر بلدیات سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اس کا نوٹس لے کر ان کے مسئلے کو فوری طور پر حل کرائیں اس گندے پانی کے کھڑے ہونے اور شدید گرمی کی وجہ سے علاقے میں وبائی امراض پھیلنے کا خطرہ پیدا ہو گیا ہے۔