آصف زرداری نے حفاظتی ضمانت کی تمام درخواستیں واپس لے لیں

121

سابق صدر آصف علی زرداری نے اسلام آباد ہائیکورٹ میں دائر اپنی حفاظتی ضمانت کی تمام درخواستیں واپس لیتے ہوئے کہا ہے کہ ہیں میرا پارک لین سے کوئی تعلق نہیں، مشکلات آتی رہتی ہیں ان کاٹ کر مقابلہ کیا ہے، یہ سب گیم کا حصہ ہے۔

سابق صدر آصف علی زرداری کی حفاظتی ضمانتوں کی درخواست پر سماعت اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس محسن اختر کیانی اور جسٹس عامر فاروق پر مشتمل بینچ نے کی۔ دوران سماعت نیب کی جانب سے سابق صدر آصف علی زرداری کو عدالت میں پیش کیا گیا۔ بیٹے بلاول بھٹو زرداری بھی بھی آصف علی زرداری سے ملنے آن پہنچے۔

سابق صدر آصف علی زرداری نے عدالت کے روبرو موقف اپنایا کہ میرے وکلا بہت قابل ہیں۔ استغاثہ کہتی ہے کہ میں نے کمپنی بنائی، دعوی کیا گیا کہ میں نے پارک لین خریدی،کوئی دستاویزات نہیں کہ بطور ڈائریکٹر میں نے دستخط کئے ہوں،میرا پارک لین اور توشہ خانہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ مجھ پر بی ایم ڈبلیو والا کیس بھی بنایا گیا۔

 آصف علی زرداری کا کہنا تھا کہ مشکلات آتی رہتی ہیں اس کا ڈٹ کر مقابلہ کیا۔ یہ سب گیم کا حصہ ہے۔ جسٹس عامر فاروق نے نیب پراسیکیوٹر سے استفسار کیا کہ ان درخواستوں پر وارنٹ گرفتاری جاری کیے گئے ہیں یا نہیں؟۔

سردار مظفر عباسی نے عدالت کو آگاہ کیا کہ ان کیسز میں ابھی تک وارنٹ گرفتاری جاری نہیں کیے گئے ہیں۔سابق صدر آصف علی زرداری نے اپنی زمانت کی درخواستیں واپس لے لے لیں۔