کرپشن کیس میں شرجیل میمن کی درخواستِ ضمانت منظور

100

سندھ کے محکمہ اطلاعات میں تقریباً 5 ارب 75 کروڑ روپے کی کرپشن سے متعلق ریفرنس میں گرفتار پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے رہنما اور سابق صوبائی وزیر اطلاعات شرجیل انعام میمن کی درخواست ضمانت منظور کرلی گئی۔

سندھ ہائی کوٹ میں سابق صوبائی وزیر اطلاعات شرجیل انعام میمن کی درخواست ضمانت پر سماعت ہوئی۔

سماعت کے دوران قومی احتساب بیورو (نیب) کے پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ شرجیل انعام میمن پر اختیارات کے نا جائز استعمال کا الزام ہے جو محکمہ اطلاعات سندھ میں تقریباً پونے 6 ارب روپے کی کرپشن کا باعث بنے۔

نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو یہ بھی بتایا کہ ہمیں شرجیل میمن نہیں بلکہ سندھ حکومت کے خلاف شکایت موصول ہوئی تھی۔نیب کے تفتیشی افسر نے کیس کے بارے میں عدالت کو آگاہ کیا کہ ایڈورٹائزنگ ایجنسی نے چینل کو کم رقم دی جبکہ حکومت سے زیادہ وقم وصول کی گئی۔

اس پر عدالت نے استفسار کیا کہ یہ ایک ایڈورٹائزنگ ایجنسی اور چینلز کے درمیان کا معاملہ ہے، نیب کیسے ثابت کرے گا کہ شرجیل انعام میمن نے اس میں کِک بیکس لیے ہیں۔تاہم تفتیشی افسر نے بتایا کہ یہ ثابت نہیں ہوتا ہے کہ شرجیل میمن نے کِک بیکس وصول کئے ہیں، تاہم ان کے اختیارات کا ناجائز استعمال ثابت ہوتا ہے۔

بعد ازاں عدالت نے شرجیل انعام میمن کی درخواست ضمانت 50 لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکوں کے عوض منظور کرلی۔