اب سندھی، بلوچی یا پشتون کارڈنہیں چلے گا،شہریار آفریدی

130

وزیرمملکت سیفران شہریار آفریدی نے کہا کہ حکمران حساب کیوں نہیں دیتے کہ ان کی دولت کہاں سے آئی،کوئی سمجھتا ہے کہ سندھی ، بلوچی یا پشتو کارڈ استعمال کرلے گا تو سن لے اب وہ دن گئے۔

قومی اسمبلی کے اجلاس میں بجٹ پر عام بحث کے دوران اظہار خیال کر رہے تھے۔وزیر مملکت سیفران شہر یار آفریدی نے کہا کہ اس ملک میں 71 سال امیروں اور شرفاءکو احتساب سے باہر رکھا گیا،میرے والد قائم اعظم کے ساتھی تھے قیام پاکستان سے قبل میرے والد کی تین صوبوں میں جانبدار تھی لیکن وقت کے ساتھ ان اثاثوں میں کمی ہوئی میں آج نئی گاڑی خریدنے کا تصور نہیں کر سکتا لیکن وہ کون لوگ ہیں جن کی جائیدادیں مسلسل بڑھتی رہیں، یہ لوگ احتساب سے کیوں ڈرتے ہیں، انہیں دلیری سے احتساب کا سامنا کرنا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ انہیں عمران خان کی طرح اپنا حساب دے کر خود کو امین و صادق منوانا چاہیے، اب قانون سے کوئی بالاتر نہیں عمران خان سمیت سب قانون کی نظر میں برابر ہیں، پاکستانی قوم عزت چاہتی ہے اور اللہ کے بعد عمران خان ہی اس قوم کو عزت دے گا، نیا پاکستان ضرور بنے گا اور عمران خان ضرور کامیاب ہوگا۔انہوں نے کہا کہ ملک جس کی نسبت اللہ نے کلمے سے جوڑی ہے، پہلاوعدہ رب سے ہے، دوسرارسول سے ہے، کیاوجہ ہے تعلیمی نظام، سوشل سسٹم غیرمسلموں کا بنایا ہوا ہے۔

شہریارآفریدی کا کہنا تھا کہ مسلمانوں کے اصول مغرب نے اپنالئے ہیں ، پاکستان کومقروض کس نے کیا؟ بھارتی وزیراعظم کہتاہے پاکستان کومیں خریدلوں گا، پوری دنیامیں مسلمان زیرعتاب ہیں، اسلامی قوانین اپناکرمغرب ہم سے بہت آگے نکل گیا ہے۔

وزیرمملکت نے کہا کہ میراسوال ہے آنکھوں پرپٹی باندھ کرلیڈرپرکیسے یقین رکھتے ہیں، عام باسی کو تکلیف ہوتی ہے، کچہری اور ہر جگہ تذلیل ہوتی ہے، آپ کے جانور باہر سے کھانا کھائے اور غریب عوام ترستے رہے ، جائیں ایک ایک روپے کاحساب دیں جس طرح عمران خان نے دیا۔

کچھ لوگ اس ملک کے نام پرکھاتے رہے، کلبھوشن سے متعلق ایف آئی آرتک نہیں کٹوارہے تھے، قانون سے بالاترعمران خان ہے نہ کوئی اور، کوئی سمجھتا ہے سندھ بلوچی کارڈ استعمال کرے گا توسن لے وہ دن گئے، عمران خان کامقصد ہے عزت نفس دینااور وہ کامیاب ہوگا۔