پشاور، جعلی کرنسی اسمگل کرنے کی کوشش ناکام ، 3 ملزمان گرفتار

81

 

پشاور (اے پی پی) کیپیٹل سٹی پولیس پشاور نے کار کے ذریعے لاکھوں روپے جعلی کرنسی اسمگل کرنے کی کوشش ناکام بنا تے ہوئے 3 ملزمان کو گرفتار کرلیا۔ ایس ایس پی آپریشن ظہور بابر آفریدی کو خفیہ ذرائع سے اطلاع ملی تھی کہ کسی بھی وقت لاکھوں روپے جعلی پاکستانی کرنسی درہ آدم خیل پشاور کے راستے پنجاب اسمگل کرنے کی کوشش کی جائے گی۔ اطلاع کو مصدقہ جان کر شہر کے تمام داخلی راستوں کی نگرانی سخت کرنے کے ساتھ ساتھ رنگ روڈ پر خصوصی ناکہ بندی کرنے کے بھی احکامات جاری کر دیے گئے۔ ڈی ایس پی سبرب عتیق شاہ کی نگرانی میں ایس ایچ او تھانہ آغہ میر جانی شاہ عمر آفریدی، انچارج سائنس کالج پولیس چوکی اے ایس آئی فدا خان اور اے ایس آئی خالد خان رنگ روڈ کاکا خیل سی این جی اسٹیشن کے قریب ناکہ بندی پر موجود تھے کہ اس دوران ایک مشکوک موٹر کار کو روک کر تلاشی لینے پر گاڑی سے 28 لاکھ 25 ہزار روپے جعلی پاکستانی کرنسی برآمد کرکے 3 ملزمان کو گرفتار کرلیا۔ گرفتار ملزمان نے ابتدائی تفتیش کے دوران موٹر کار کے ذریعے جعلی کرنسی اسمگلنگ میں ملوث ہونے کا اعتراف کرلیا۔ پولیس نے جعلی کرنسی اسمگلنگ میں استعمال ہونے والی گاڑی بھی تحویل میں لیتے ہوئے تھانہ آغا میر جانی شاہ منتقل کردی جبکہ تینوں ملزمان کیخلاف مقدمہ درج کرکے شروع کردی گئی ہے۔ کیپیٹل سٹی پولیس پشاور نے خفیہ اطلاع پر کارروائی کرتے ہوئے اندرون شہر قمار بازی میں مصروف 16 ملزمان کو گرفتار کرلیا۔ گزشتہ روز ڈی ایس پی سٹی ٹو ریاض خان کو خفیہ اطلاع ملی تھی کہ تھانہ کوتوالی کی حدود محلہ کشمیری میں چند ملزمان قمار بازی میں مصروف ہیںا اطلاع کو مصدقہ جانتے ہوئے ایس ایچ او تھانہ کوتوالی نور حیدرکی سربراہی میں خصوصی ٹیم تشکیل دے کر قمار بازی میں مصروف ملزمان کو گرفتار کرنے کا ٹاسک حوالے کیا گیا۔ ایس ایچ او نور حیدر نے دیگر پولیس نفری کے ہمراہ فوری کامیاب کارروائی کرتے ہوئے کشمیری محلے میں واقع مسمی تیمور کے ڈیرے میں قمار بازی میں مصروف 16 ملزمان عمران مشتاق، علی حیدر، خان محمد، نیاز علی، الطاف، شکیل، شاہ جہان، سجاد، ریاض احمد، تیمور خان، محمد ثقلین، عبدالوحید، عبدالحمید، شاہ جہان خان، نیاز علی خان اور اختر گل کو گرفتار کرلیا۔ گرفتار افراد نے ابتدائی تفتیش کے دوران قمار بازی میں ملوث ہونے کا اعتراف کرلیا ہے، جن کے قبضے سے دائو پر لگی رقم 55 ہزار روپے اور آلات قمار بازی بھی برآمد کرلی گئی۔ تمام ملزمان کیخلاف مقدمہ درج کرکے مزید تفتیش شروع کردی گئی۔ کیپیٹل سٹی پولیس پشاور نے راہ چلتے شہریوں سے قیمتی موبائل فونز چھین کر فرار ہونے والے 2 ملزمان کو گرفتار کرلیا۔ مدعی احمد بلال سکنہ نے گنج تھانہ پھندو کو رپورٹ درج کراتے ہوئے بتایا کہ وہ دکان بند کرنے کے بعد گھر جارہا تھا کہ راستے میں 2 نامعلوم موٹر سائیکل سوار اس سے قیمتی موبائل فون چھین کر فرار ہوگئے، جس کی رپورٹ پر نامعلوم ملزمان کیخلاف مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی گئی۔ ایس ایس پی آپریشن ظہور بابر آفریدی نے واقعہ کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے اے ایس پی گلبہار احمد زنیر چیمہ کی سربراہی میں ایس ایچ او تھانہ پھندو قاضی نثار احمد اور تفتیشی عملے پر مشتمل خصوصی ٹیم تشکیل دیتے ہوئے واردات میں ملوث گروہ کو جلد از جلد ٹریس کرکے گرفتار کرنے کا ٹاسک حوالے کیا۔ اے ایس پی احمد زنیر چیمہ کی سربراہی میں ایس ایچ او قاضی نثار نے جدید سائنسی خطوط پر تفتیش جاری رکھتے ہوئے متعدد جرائم پیشہ افراد کو شامل تفتیش کرنے کیساتھ ساتھ ان کے بیانات بھی قلمبند کیے، جس کے دوران واردات میں ملوث اصل ملزمان تک رسائی حاصل کرنے میں کامیابی حاصل کرتے ہوئے گزشتہ روز واردات میں ملوث 2 ملزمان عمران اور نوید کو گرفتار کرلیا۔ دونوں ملزمان نے ابتدائی تفتیش کے دوران راہ چلتے شہریوں سے موبائل فون چھیننے کی متعدد وارداتوں میں ملوث ہونے کا اعتراف کرلیا ہے، جن کی نشاندہی پر ان کے قبضے سے 4 عدد چھینے گئے موبائل فونز سمیت وارداتوں میں استعمال ہونے والی موٹر سائیکل بھی برآمد کرلی۔ ملزمان سے مزید تفتیش جاری ہے۔