لیاقت یونیورسٹی اسپتال میں پانچ ماہ میں 7 لاکھ مریضوں کا مفت معائنہ

45

حیدر آباد (اسٹاف رپورٹر) لیاقت یونیورسٹی اسپتال حیدر آباد میں پانچ ماہ کے دوران تقریباً 7 لاکھ کے قریب مریضوں کا او پی ڈی میںطبی معائنہ کیا گیا۔ سول اسپتال حیدرآباد کے شعبہ حادثات میں 441469 مریضوں کو فوری طبی امداد دی گئی۔ اسپتال میں حیدرآباد سمیت 17 اضلاع کے مختلف امراض میں مبتلا مریضوں کو علاج کے لیے لایا گیا۔ ان خیالات کا اظہار سول اسپتال کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر مبین احمد میمن نے اسپتال کا دورہ کرنے والی مختلف تاجروں اور سماجی تنظیموں کے رہنماؤں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر اسپتال کے ڈائریکٹر ایڈمن عبدالستار جتوئی، اے ایم ایس جنرل ڈاکٹر نعیم ضیاء میمن، اے ایم ایس ڈاکٹر شاہد جونیجو، ڈاکٹر شوکت علی لاکھو اور دیگر انتظامی افسران موجود تھے۔ انہوں نے بتایا کہ سول اسپتال حیدرآباد میں جنوری سے مئی 2019ء تک او پی ڈی میں 699587 مریضوں کا طبی معائنہ کیا گیا اور انہیں مفت ادویات دی گئیں۔ اس کے علاوہ اسپتال میں 179725مریضوں کو اسپتال کے مختلف وارڈوں میں داخل کرنے کے بعد اُن کا علاج کیا گیا۔ سول اسپتال کے شعبہ حادثات میں 441469 مریضوں کو لایا گیا جن میں سے بڑی تعداد تشویشناک حالت میں لائے جانے والے مریضوں کی ہے جنہیں طبی امداد دی گئی۔ اسپتال کے گائنی وارڈ میں 3081 آپریشن کے ذریعے بچوں کی ولادت ہوئی۔ جبکہ نارمل ڈیلیوری کے ذریعے 3340 بچوں کی پیدائش ہوئی۔ جبکہ کتے کے کاٹے کے 3900 مریضوں کو لایا گیا۔ اسپتال میں ہزاروں کی تعداد میں مفت پتھالوجی ٹیسٹ کیے گئے۔ اس کے علاوہ بڑی تعداد میں سی ٹی اسکین، ایم آر آئی بھی مفت کی گئیں۔ سول اسپتال حیدرآباد میں 24 گھنٹے مریضوں کو طبی امداد کی فراہمی کے لیے سینئر پروفیسر، اسسٹنٹ پروفیسر، ڈاکٹر سرجن کے علاوہ پیرا میڈیکل اسٹاف اور نرسنگ اسٹاف بھی ڈیوٹی انجام دیتے ہیں۔ بہتر طبی سہولیات کی فراہمی کی وجہ سے مریضوں کے رش میں اضافہ ہوگیا ہے۔ تاہم اس اسپتال انتظامیہ صوبائی حکومت کے وژن اور طبی سہولیات کی فراہمی کے عزم کے تحت دن رات مریضوں کے علاج معالجے کے لیے کوشاں ہیں۔