سراج الحق، سید منور حسن ،امیر العظیم ودیگرکا مرسی کے انتقال پراظہار افسوس

146

لاہورامیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق سابق امیر سید منورحسن ،سیکرٹری جنرل امیر العظیم ،لیاقت بلوچ ،راشد نسیم ،اسد اللہ بھٹو،میاں محمد اسلم ،ڈاکٹر فرید احمد پراچہ ،عبد الغفار عزیز ،پروفیسر محمد ابراہیم ،ڈاکٹر معراج الہدیٰ صدیقی ،حافظ محمد ادریس،سیکرٹری اطلاعات قیصر شریف، جماعت اسلامی کے رہنمائوں اور کارکنوں نے مصر کے منتخب صدرڈاکٹر محمد مرسی کی جیل میںشہادت پر گہرے رنج و غم کا اظہارکیا ہے۔ سینیٹر سراج الحق نے اپنے تعزیتی بیان میں کہا ہے کہ عالم اسلام اور امت مسلمہ آج ایک عظیم رہنما محروم ہوگئی ہے ۔سینیٹر سراج الحق نے پورے عالم اسلام اور امت مسلمہ سے شہید جمہوریت محمد مرسی کی شہادت پر تعزیت کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹر محمد مرسی کا اکلوتا جرم مصری عوام کو بنیادی حقوق فراہم کرنااور فلسطین کی آزادی کا مطالبہ تھا ۔ڈاکٹر محمد مرسی کو کہا گیا کہ وہ مسجد اقصیٰ کی آزادی کے مطالبے سے دستبردار ہوجائیں اور مظلوم فلسطینیوں کی حمایت چھوڑ دیں مگر انہوں نے ڈکٹیٹر شپ اورمصری عوام پر مسلط صیہونی تسلط کو تسلیم کرنے سے انکار کردیا۔سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ ڈاکٹر محمد مرسی پر ظلم و جبر کے تمام ہتھکنڈے آزمائے گئے ،منتخب صدر کو معزول کرنے کے بعد چھ سال تک قید تنہائی میں رکھا گیا۔ قید کے دوران ڈاکٹر محمد مرسی کو اہل خانہ ،ڈاکٹروں اور وکلاء سے ملنے سے بھی روکا گیا اور صرف چار مرتبہ ملاقات کی اجاز ت دی گئی۔ڈاکٹر محمد مرسی دنیا کی ظالم عدالت سے اللہ کی عدالت میں انصاف لینے چلے گئے ہیں۔سینیٹر سراج الحق نے پاکستانی قوم سے اپیل کی ہے کہ وہ کل پورے ملک میں مرحوم محمد مرسی کی غائبانہ نماز جنازہ ادا کریں۔مرکز جماعت اسلامی منصورہ میں محمد مرسی شہید کی غائبانہ نماز جنازہ کل بروز منگل بعد نماز عصر ادا کی جائے گی۔