حکومتی حمایت کے باعث الطاف حسین کو ضمانت ملی، صاحبزادہ ابوالخیر

106

حیدرآباد(اسٹاف رپورٹر)جمعیت علماء پاکستان و ملی یکجہتی کونسل کے صدر ڈاکٹر صاحبزادہ ابوالخیر محمد زبیرنے کہا ہے کہ الطاف حسین کی گرفتاری کی خبر سے 12مئی اور بلدیہ ٹاؤن جیسے سینکڑوںواقعات کے مظلومین اور متاثرین کو امید کی کرن نظر آئی تھی لیکن وزیر اعظم عمران خان جو الطاف حسین کو12مئی سمیت کراچی میں دہشت گردی کاذمے دار قرار دے رہے تھے اوربرطانیہ میں انکے خلاف کیس لڑنے کا اعلان کرتے رہے تھے ان کی اس گرفتاری پر خاموشی اور ان کے وزیر داخلہ کے اس بیان نے قوم کو شدید مایوس کردیا ہے کہ ان کو برطانوی حکومت نے گرفتار کیا ہمارا اس سے کیا تعلق اور شاید ہمارے حکمرانوں کی الطاف حسین کے کیس سے عدم دلچسپی کے ذریعے ان کی درپردہ حمایت ہی انکی ضمانت اور رہائی کا باعث بن گئی ہے بلکہ بعض تجزیہ نگار تو جسٹس فائز عیسیٰ کے ریفرنس کو بھی اسی تناظر میں دیکھ رہے ہیںکہ فائز عیسیٰ نے فیض آباد دھرنے کا فیصلہ سناتے ہوئے لکھا تھا کہ12مئی کو کراچی میں قتل عام کرنے والوں کو سزا مل جاتی تو تحریک لبیک کوہنگامہ آرائی کی جرأت نہ ہوتی انہوں نے کہا کہ عوام حیران ہیں کہ کیا عمران خان نے اسی تبدیلی کا خواب دکھا یا تھا۔
ابوالخیر