انسانی حقوق کی ذیلی کمیٹی کا اجلاس‘ زینب الرٹ بل کا جائزہ

35

اسلام آباد (صباح نیوز) قومی اسمبلی کی مجلس قائمہ انسانی حقوق کی ذیلی کمیٹی کا اجلاس اجلاس کنوینر کمیٹی ڈاکٹر مہرین بھٹو کی صدارت میں ہوا۔ اجلاس میں بچوں سے زیادتی کے بڑھتے ہوئے افسوسناک واقعات کی روک تھام کے لیے اقدامات پر غور کیا گیا۔ اجلاس میں زینب الرٹ بل کا جائزہ لیا گیا۔ زینب الرٹ بل پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کمیٹی نے زینب بل کو غیر موثر اور نامکمل قرار دے دیا ہے ۔کمیٹی میں واضح کیا گیا ہے کہ بچوں سے زیادتی سے متعلق یہ بل عالمی دبا ؤکے تحت عجلت میں تیار کیا گیا ہے،کنوینر کمیٹی مہرین بھٹو نے کہا کہ بل میں کئی خامیاں ہیں۔کمیٹی نے وفاقی وزارت برائے انسانی حقوق کو زینب الرٹ بل میں متعدد ترامیم کی تجویز کردی ہیں۔کمیٹی نے ترمیم تجویز کی ہے کہ پولیس بچوں سے زیادتی کے واقعے کی 2گھنٹے کے اندر رپورٹ درج کرنے کی پابند ہونی چاہیے۔ کمیٹی نے تجویز دی ہے کہ چائلڈ پروٹیکشن بیورو اور زینب الرٹ رسپانس اینڈ ریکوری ایجنسی کا ڈی جی ایک ہی ہونا چاہیے ۔ واضح کیا گیا ہے کہ کسی دبا ؤکے تحت ہونے والی قانون سازی کو کسی طور موثر نہیں ہوسکتی۔
زینب الرٹ بل