میرپور خاص، پرائمری اسکول کے پلاٹ سے قبضہ واگزار کرانے کا نوٹس

33

میرپورخاص(نمائندہ جسارت) پرائمری اسکول کے پلاٹ پر قبضہ ختم کرانے کی درخواست پر اینٹی انکروچمنٹ ٹریبونل کے پرایزائیڈنگ آفیسر ذوالفقار سولنگی نے تین جولائی کے لیے نوٹس جاری کردیے۔ اے آر کے سوسائٹی برائے تحفظ حقوق کے چیئرمین عبدالناصر خان کی جانب سے داخل کی جانے والی درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ 2007ء میں تعلقہ کونسل میرپورخاص نے کمرشل ایریا سیٹلائٹ ٹائون میں واقع 3300 اسکوائر فٹ کا ایک پلاٹ عادل پرائمری اسکول کے لیے دینے کا فیصلہ کیا اور باقاعدہ اسکول کے پلاٹ کا قبضہ جس کے چاروں طرف 20 فٹ کا روڈ ہے، محکمہ تعلیم کے حوالے کیا گیا۔ بعد میں اسکول کے پلاٹ پر بااثر شخص انور قائم خانی نے قبضہ کر لیا، ہیڈ ماسٹر نے کئی مرتبہ تحریری درخواستیں دے کر قبضہ خالی کرانے کی کوشش کی لیکن ایسا نہیں ہوسکا، اسی وجہ سے وہاں پرائمری اسکول کی تعمیر نہیں ہوسکی۔ مذکورہ اسکول متبادل اسکول کی عمارت میں کام جاری رکھا ہوا ہے، آر اے کے سوسائٹی کے چیئرمین کی درخواست پر اینٹی انکروچمنٹ ٹریبونل نے انور قائم خانی کو تین جولائی کو طلب کرلیا ہے جبکہ اسٹنٹ کمشنر (اے سی) میرپورخاص اور تعلقہ آفیسر تعلیم میرپورخاص سے بھی تحریری رپورٹ طلب کرلی ہے۔