ریلوے پریم یونین کا ظالمانہ بجٹ کیخلاف بھرپور احتجاج

43

اسلام آباد ( نمائندہ خصوصی)ریلوے پریم یونین کا ظالمانہ بجٹ کے خلاف ذبردست احتجاجی مظاہرہ کیا ۔احتجاجی مظاہرے کی قیادت پرویز اختر اعوان ،راجہ نصیر ،حامد خان، خوریشد عالم ،راجہ پرویز ،ملتان خان،راجہ یاسر اسلم،محمد فیصل،محمد سلیم،راجہ راضوان،عبدالکریم،محمد اسعید نے کی ،مظاہرین کی سینہ کوبی اور شدید نعرہ بازی ۔مرگئے مر گئے بھوکے مر گئے،آی ایم ایف کا بجٹ نامنظور ،ورلڈ بینک کا بجٹ نامنظور ،سودی بجٹ نامنظور تبدیلی نامنظور اور سرمایہ دارانہ بجٹ نامنظور ۔احتجاجی مظاہرہ میں سیکڑوں مزدوروں کی شرکت ۔پریم یونین کے رہنما اشتیاق احمد آسی نے مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہر دور میں محنت کشوں سے سوتیلی ماں والا ہی سلوک کیا گیا ۔سیاسی اشرافیہ ملک میں معاشی استحکام لانے میں بری طرح ناکام رہی ہے جس کے نتیجے میں آج غریب مزدور دو وقت کی روٹی کے حصول میں رل گیا ہے ۔ہم اس ناکام حکومت کے لائے گئے بدترین بجٹ کو مسترد کرتے ہیں اور اس کے خلاف ایک بڑی احتجاجی تحریک چلانے کا اعلان کرتے ہیں ۔ہم آی ایم ایف کے ملازمین کا بنایا گیا مزدور دشمن بجٹ نامنظور کرتے ہیں ۔مہنگائی اور بیروزگاری کے اس مشکل دور میں مزید مہنگائی غریب عوام کی کمر توڑ کر رکھ دے گی ۔ دس فیصد تنخواہوں اور پینشنز میں اضافے کا اعلان مزدور دشمن طبقہ ہی کر سکتا ہے ۔مارکیٹ میں مہنگائی کا مقابلہ کرنے کے لیے یہ دس فیصد تو اونٹ کے منہ میں زیرے کے مصداق ہے ۔ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ اجرتوں اور پینشن میں سو فیصد اضافہ کیا جائے اور یہ قرضوں اور لوٹ مار کے قصے سنا کر ہمیں بے وقوف بنانے کا ناٹک بھی بند کیا جائے ۔نیا پاکستان اور تبدیلی کے نعرے لگا کر ووٹ حاصل کر کے آج فرار کی راہ اختیار کی جا رہی ہے جو قابل مزمت بھی ہے اور مزدوروں کے ساتھ ظلم بھی ۔ مہینوں اور سالوں کے کھوکھلے دعوے اور وعدے کسی صورت قبول نہیں