تاجر برادری بجٹ میں کٹوتی پر فوج کو سلام پیش کرتی ہے

42

کراچی(اسٹاف رپورٹر) تاجر رہنما شاہد رشید بٹ نے کہا ہے کہ فوج نے سنگین چیلنجز کے باوجود اپنے بجٹ میں زبردست کٹوتی کی ہے جس پر ملک بھر کی تاجر برادری انھیں سلام پیش کرتی ہے۔ہمیں اپنی نظریاتی اور جغرافیائی سرحدوں کے محافظوںکی خدمات پر فخر ہے اورانکی قربانیوں کی وجہ سے ساری قوم انکی قرض دار ہے۔دوست ملک چین کو چائیے کہ پاکستان کی مشکلات کا ادراک کرتے ہوئے ہماری حکومت کو دئیے گئے قرضے اور فوجی ساز و سامان کی ادائیگیوں کو موخر کر نے کا اعلان کرے۔ اسلام آباد چیمبر کے سابق صدر شاہد رشید بٹ نے تاجروں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ فوج کے بجٹ اور اپالیسیوں پر تنقید کرنے والے جعلی دانشور ملک دشمن ہیں ۔ ملکی دفاع سب سے اہم معاملہ ہے اس پر جتنا خرچ کیا جائے کم ہے۔فوج درجنوں ممالک کی سازشوں کا مقابلہ کر رہی ہے جس میں سے صرف ایک پڑوسی ملک اپنی فوج پر پاکستان سے سات گنا زیادہ خرچہ کر رہا ہے مگر پاک فوج کم وسائل کے باوجود اسکی ساری سازشوں کو کامیابی سے ناکام بنا رہی ہے۔ملک دشمن قوتوں کے آلہ کار عناصر کو فوج کاتقریباً ایک کھرب کا بجٹ تو نظر آتا ہے جس میں فوج ملکی دفاع کا فریضہ احسن طریقہ سے سرانجام دیتی ہے مگر بجٹ کا باقی ماندہ چھ کھرب نظر نہیں آتا جس کا بڑا حصہ نقصان میں چلنے والی سرکاری کمپنیاں،استحصالی بزنس گروپ ،سیاستدان اور بیوروکریٹ ضائع کر دیتے ہیں۔انھوں نے کہا کہ معیشت کمزور ہو تو فوج بھی کمزور ہو جاتی ہے۔پاک فوج کا دارومدار بھی اچھی معیشت پر ہے اس لئے ہم موجودہ بجٹ میںآمدنی میں اضافہ کے لئے کئے جانے والے حکومتی اقدامات کی غیر مشروط حمایت اور اپوزیشن کے شور کو مسترد کرتے ہیں۔اپوزیشن کو اگر عوام کی فکر ہوتی تو اربوں ڈالر کی کرپشن نہ کرتی۔وہ ملک نہیں بلکہ لوٹے گئے سرمائے کو بچانے کے لئے متحد ہوئے ہیں۔اپوزیشن کے دعووں کے برخلاف وزیر اعظم عمران خان کرپشن کے خاتمہ اور معیشت کی ترقی کو بہ یک وقت ممکن بنا کر دکھانے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ وزیر اعظم کی جانب سے بھارتی وزیر اعظم مودی سے بار بار کے رابطے اور امن کی خواہش ملک کے بہتر ین مفاد میں ہے جس کا بھارت کو مثبت جواب دینا چائیے تاکہ کشیدگی کم ہو۔