جعلی ڈگری،پی پی کے سابق رکن اسمبلی گرفتار

50

حیدرآباد(اسٹاف رپورٹر)سندھ ہائی کورٹ سرکٹ بینچ حیدرآباد نے پی پی پی کے سابق رکن صوبائی اسمبلی بشیرسریوال کو بدین پولیس کے حوالے کردیا۔پولیس نے گرفتار سابق رکن کوسینٹرل جیل بھیج دیا۔عدالت ِ عالیہ نے ان کے ناقابلِ ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کیے ہوئےتھے۔ تفصیلات کے مطابق بشیر احمد سریوال 2008ء کے عام انتخابات میں بدین کے حلقہ پی ایس 56سے منتخب ہو ئے تھے ان کے مخالف امیدوار نے ان کی جعلی ڈگری پر سیشن کورٹ بدین میں مقدمہ دائر کیا تھاجس کے بعد فاضل عدالت نے 2013ء میں ان پر جعلی ڈگری کا کیس ثابت ہو نے پر انہیں 2سال قید اور پانچ ہزار روپے جرمانہ کی سزا سنائی تھی تاہم انہوں نے سندھ ہائی کورٹ حیدرآباد سرکٹ بینچ میں اپیل داخل کی جس میں پہلے عدالتِ عالیہ نے انہیں عبوری ضمانت دے دی تاہم بعد میں عدالت نے ان کی ضمانت منسوخ کردی جس کے بعد یہ فرار ہوگئے تو عدالتِ عالیہ نے ان کے ناقابلِ ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کیے۔ بشیر سریوال جمعرات کو اپنے وکلا کے ہمراہ سندھ ہائی کورٹ حیدرآباد پہنچے جہاں سندھ ہائی کورٹ کے سرکٹ بینچ میں انہیں جسٹس ندیم اختر اور جسٹس عبدالرشید سومرو کے روبرو پیش کیا گیا۔ عدالت عالیہ نے انہیں گرفتار کرنے کا حکم دے دیا ۔انہیں گرفتار کرنے کے لیے گلاب لغاری پولیس اسٹیشن بدین کی پولیس موجود تھی جس نے انہیں عدالت سے سینٹرل جیل حیدرآباد پولیس کے حوالے کردیا ہے۔