پاکستان کے مقابلے بھارتی ٹیم زیادہ مضبوط ہے ،کامران اکمل

30

لاہور(جساررت نیوز )قومی کرکٹ ٹیم کے سابق وکٹ کیپر بلے باز کامران اکمل نے کہا ہے کہ پاکستان کی ٹیم آسٹریلیا کیخلاف جیت جاتی تو پاکستان اور بھارت کے مابین 16جون کو ہونے والے میچ میں بھارتی ٹیم پر زیادہ پریشر ہوتا لیکن اب مورال ڈائون ہونے کی وجہ سے پاکستانی ٹیم دبائو میں کھیلے گی۔جمعرات کے روز سرکاری خبر رساں ادارے سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کامران اکمل نے کہا کہ آسٹریلیا کیخلاف میچ میں پاکستان ٹیم کے پاس جیت کا واضح موقع تھا ۔پاکستان نے آسٹریلیا کی ٹیم کو زیادہ بڑا سکور نہیں بنانے دیا لیکن پاکستانی بلے باز اس موقع سے فائدہ نہیں اٹھاسکے۔ پاکستان ٹیم کی فیلڈنگ معیاری نہیں تھی اور بیٹنگ بھی ناکام ہوگئی ۔کامران اکمل نے کہاکہ آسٹریلیا کیخلاف میچ میں محمد عامر نے اپنے تجربہ سے فائدہ اٹھایا اور اچھی بولنگ کی جبکہ وہاب ریاض بھی بہتر بولنگ کر رہے ہیں لیکن دیگر بولرز کی کارکردگی متاثر کن نہیں تھی لیکن میری سمجھ سے باہر ہے کہ شاداب خان جو کہ اچھے بولر ،فیلڈر اور بہتر بیٹنگ کرلیتے ہیں کو آسٹریلیا کیخلاف میچ میں ڈراپ کیوں کیا گیا ۔اسے بھارت کیخلاف میچ میں ٹیم کا حصہ بنایا جانا چاہئے۔ قومی کرکٹ ٹیم میں ٹیم ورک نظر نہیں آیا ۔انہوں نے کہاکہ بھارت کیخلاف میچ میں پاکستانی ٹیم اگر پہلے بیٹنگ کرتی ہے تو اسے 350 سے زائد سکور کرنے کے ساتھ ساتھ دیگر شعبوں میں بھی اچھی پرفارمنس کا مظاہرہ کرنا ہوگا ۔بھارت کیخلاف خراب فیلڈنگ کی کوئی گنجائش نہیں ہے۔ پاکستانی ٹیم کو ایک بلے باز کم کرکے ایک اور بولر کو ٹیم میں شامل کرنا ہوگا ۔کامران اکمل نے کہاکہ اگر بھارت کی ٹیم بیٹنگ کرتی ہے تو پاکستان کو اسے 300رنز کے اندر اندر آئوٹ کرنا چاہئے نہیں تو بھارتی ٹیم سے میچ جیتنا مشکل ہوگا ۔