سول سوسائٹی و شہری اتحادکی وائس چانسلر جامعہ سندھ کی مکمل حمایت

61

حیدر آباد (اسٹاف رپورٹر) جامشورو اور کوٹری کی سول سوسائٹی، شہری اتحاد و سیاسی سماجی رہنمائوں نے شیخ الجامعہ پروفیسر ڈاکٹر فتح محمد برفت کی مکمل حمایت کا اعلان کرتے ہوئے واضح کیا ہے کہ جامعہ سندھ اور اس کی ترقی و تعلیمی عروج کے لیے کوشاں وائس چانسلر کے خلاف جھوٹے پروپیگنڈا اور اپنے ذاتی مفادات کے حصول کے لیے انگلی اٹھانے والوں کو معاف نہیں کیا جائیگا اور ایسے عناصر کیخلاف عدالتی کارروائی کی جائیگی۔ شیخ الجامعہ ڈاکٹر برفت کا کہنا تھا کہ وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ صوبے کے چیف ایگزیکٹو اور جامعہ سندھ کے چانسلر ہیں، ان سے اختلافات کا سوچ بھی نہیں سکتے، وزیراعلیٰ جو بھی حکم کرینگے، وہ حاضر ہوجائینگے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ جامشورو و کوٹڑی کی سول سائٹی و شہری اتحاد کے رہنمائوں سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ سول سائٹی و شہری اتحاد کے رہنمائوں روشن برہمانی، حاجی واحد بخش بھلائی، ساگر عالمانی سمیت 16 رکنی وفد میں شامل نمائندوں نے ڈاکٹر برفت کو عدالت سے بطور وائس چانسلر کو بحالی پر مبارکباد دی اور اجرک و پھولوں کے ہار پہنائے۔ اس موقع پر بات کرتے ہوئے روشن برہمانی نے کہا کہ جامعہ سندھ میں ان کی بچیاں اور بچے تعلیم حاصل کر رہے ہیں، جبکہ وائس چانسلر ڈاکٹر برفت یونیورسٹی کی تعلیمی ترقی پر بہت دھیان دے رہے ہیں، ان کی کوششوں کی وجہ سے جامعہ سندھ کیو ایس رینکنگ میں شامل ہوئی، یہاں تعلیمی و تحقیقی سرگرمیوں کو فروغ ملا، یونیورسٹی کے روڈ راستے بہتر ہوئے، امتحانی نتائج آن لائن ہوئے، داخلوں کا نظام کمپیوٹرائزڈ ہوا اور بہترین شجرکاری ہوئی۔ سندھ حکومت کے دو آفیسرز نے یونیورسٹی مخالف لابیوں کے کہنے پر وزیراعلیٰ سے غلط بیان کرکے ڈاکٹر برفت کو معطل کروایا جو کہ غیر قانونی اقدام ہے۔ انہوں نے سول سوسائٹی جامشورو و شہری اتحادکی جانب سے وائس چانسلر کی مکمل حمایت کا اعلان کیا۔