حیدرآباد: شدید گرمی میں بجلی کا بدترین بحران کئی افراد بے ہوش

60

 

حیدرآباد(اسٹاف رپورٹر) حیسکو کا نظام بیٹھ گیا، شدید گرمی میں بدترین لوڈ شیڈنگ، فلیٹوں اور چھوٹے مکانات میں رہنے والے متعدد افرادبے ہوش ہوگئے، حیدرآباد میں پہلے سے اقدامات نہ کرنے حیسکو اہلکاروں کی جانب سے کنڈا سسٹم پر مال بنانے اور بدترین نظام کے باعث شدید گرمی میں حیسکو کا نظام بیٹھ گیا شہر بھر میں بجلی کا بحران پیدا ہوگیا، نظام زندگی مفلوج ہوکر رہ گئی۔ حیدرآباد میں حیسکو کی جانب سے ناقص ترین کارکردگی کے باعث شہر میں بجلی کا تعطل
بحرانی صورت اختیار کرچکا ہے شہری دن میں چین نہ رات کو سکون کی نیند سوسکتے ہیں، ایک جانب گرمی کا پارہ46سینٹی گریڈ پر پہنچا ہوا اور شدید حبس کی حالت ہے جبکہ دوسری جانب حیسکو نے عوام کی زندگی اجیرن کررکھی ہے۔ گاڑی کھاتہ، رضوی، امید علی، علامہ اقبال، پھلیلی، میران محمد شاہ سمیت کئی سب ڈویژن میں منگل کی رات سے بجلی کا تعطل رہا گول بلڈنگ کے علاقے میں صرف ایک سے ڈیڑھ گھنٹے کے لیے بجلی آئی جو کہ تاحال غائب ہے ، بدھ کی شام 80فیصد شہر میں بجلی کی سپلائی معطل تھی جس سے فلیٹوں اور چھوٹے گھروں میں رہنے والے متعدد افراد کی حالت خراب ہوگئی، معمر افراد اور معصوم بچوں کو اسپتال پہنچایا گیا شہریوں نے حیسکو کی جانب سے اعلانیہ اور غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کے خلاف مظاہرے کیے اور ٹائروں کو نذر اتش کیا۔مظاہرین نے کہا کہ حیسکو کی کارکردگی یہ ہے کہ ٹرانسفارمر خراب ہونے کی صورت میں 2 روز بعد متبادل ملتا ہے جو کہ چند گھنٹے میںہی اڑ جاتا ہے ،مظاہرین نے اعلیٰ حکام سے اپیل کی ہے کہ مذکورہ مسئلے کا نوٹس لیا جائے اور اس کا مستقل حل نکالا جائے۔
شدید گرمی /لوڈشیڈنگ