ابھی احتجاج کا عندیہ دیا ہے اور عمران خان کی چیخیں نکل گئیں،خورشید شاہ

62

اسلام آباد (آن لائن) پیپلز پارٹی کے رہنما خورشید شاہ نے کہا ہے کہ عمران خان ’گونیازی گو‘ کے نعروں سے گونجتے ملک میں دن کی روشنی میں عوام کا سامنا کرنے کے قابل نہیں رہے‘ عمران خان رات کو چھپ کر تقریریں کررہے ہیں۔ خورشید شاہ نے عمران خان کی تقریر پر اپنے ردعمل میں کہا کہ عمران خان کی منافقت کی انتہا ہے کہ وہ بسم اللہ پڑھ کر جھوٹ بولتے ہیں‘ کیا صرف اپوزیشن رہنماؤں کی گرفتاریاں کرکے اب نیب پی ٹی آئی کے منشور کی تکمیل کرے گا؟ کیا اپوزیشن رہنماؤں کی گرفتاریاں ہی ریاست مدینہ کے قیام کا طریقہ ہیں؟۔ خورشید شاہ نے کہا کہ 60 برس میں اتنی تیزی سے قرضہ نہیں لیا گیا‘ جتنا پی ٹی آئی نے 10 ماہ میں لیا‘ مہنگائی اور بے روزگاری میں اضافے سے توجہ ہٹانے کے لیے عمران خان کرپشن کا راگ الاپ رہے ہیں‘ اگر عمران خان کرپشن کے خاتمے میں سنجیدہ ہیں تو علیمہ خان، جہانگیر ترین، پرویز خٹک کی کرپشن کیوں نہیں بتاتے‘جب کہ نیب آصف زرداری پر ایک روپے کی کرپشن اب تک ثابت نہیں کرسکا اور عمران خان آصف زرداری پر وہ الزام لگا رہے ہیں‘ جنہیں 3 دہائیوں سے ثابت نہیں کیا جاسکا۔خورشید شاہ نے کہا کہ دوسروں کے بچوں کے ملک سے باہر ہونے پر تنقید کرنے والے عمران خان کے اپنے بچے کہاں پل رہے ہیں‘ دوسروں سے قرض لینے کا حساب لینے والے عمران خان اس قرض کا حساب کب دیںگے جو ان کی حکومت نے لیا‘ قوم عمران خان سے معاشی تباہی کا حساب مانگ رہی ہے‘ اپوزیشن کو احتجاجکے لییکنٹینر دینے کی بات کرنے والے عمران خان آج دھمکیوں پر اتر آئے۔ خورشید شاہ نے کہا کہ اپوزیشن نے ابھی احتجاج کا عندیہ دیا ہے اور عمران خان کی چیخیں نکل گئیں‘ عمران خان ابھی بھی رو رہے ہیں کہ انہیں اسمبلی میں تقریر کرنے کا موقع نہیں ملا‘ عمران خان نے اسمبلی میں ایسے ہاتھ لہرائے جیسے کبھی پرویزمشرف نے مکا لہرایا تھا۔