حکومت ایک بار پھر عام آدمی کو ریلیف دینے میں ناکام رہی ہے

63

لاہور (نمائندہ جسارت) چیئرمین برابری پارٹی پاکستان جواد احمد نے 7ہزار 22ارب مالی حجم کے بجٹ کو عوام دشمن بجٹ قرار دے دیا ان کا کہنا تھا کہ بجٹ دراصل آئی ایم ایف کی ڈکٹیشن پر تیار کیا گیا ہے جو الفاظ کا گورکھ دھندہ ہے اور بڑے سے بڑا ماہر معاشیات بھی اس کو سمجھنے سے قاصر ہے تحریک انصاف کی حکومت ایک بار پھر عام آدمی کو ریلیف دینے میں ناکام رہی ہے حد تو یہ ہے کہ 35ہزار آمدنی والے گھرانے پر 55ہزار کے اخراجات مسلط کردیے گئے ہیں ان باتوں کا اظہار انہوں نے پارٹی کے مرکزی سیکرٹریٹ میں پارٹی رہنماؤں سے بجٹ کے حوالے سے خصوصی گفتگو میں کیا ۔ اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ بجٹ میں تعلیم صحت دینے اور غیر ملکی قرضوں سے نجات کا کوئی ٹھوس پلان شامل نہیں حکومت نے جہاں وفاقی ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن میں اضافے کا اعلان کیا ہے وہیں دوسری جانب لاکھوں کنٹریکٹ ملازمین کو کوئی ریلیف نہیں دیا جبکہ زرعی شعبے کے لیے مراعات کا اعلان بھی نہ کیا جانا کسان کش اور دیگر طبقات کے لیے زہر قاتل ہے۔ اس موقع پر جواد احمد نے اس امر کا اظہار بھی کیا کہ برابری پارٹی پاکستان بجٹ کو فی الفور مسترد کرتی ہے اور حکومت سے مطالبہ کرتی ہے کہ 99 فیصد کے مسائل کو مد نظر رکھتے ہوئے دودھ چینی گھی اور بجلی کی قیمتوں میں جو اضافہ کیا گیا ہے اسے واپس لیا جائے تاکہ غریب اور متوسط طبقات سکھ کا سانس لے سکیں۔