جماعت اسلامی کی احتجاجی تحریک کا آغاز 16 جون کو لاہور میں عوامی مارچ ہوگا

110
لاہور: امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق مرکزی ذمے داران سے خطاب کررہے ہیں
لاہور: امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق مرکزی ذمے داران سے خطاب کررہے ہیں

لاہور(نمائندہ جسارت) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ جماعت اسلامی 16 جون سے مہنگائی ،بے روزگاری اور آئی ایم ایف کی غلامی کے خلاف تحریک چلائے گی۔ آئی ایم ایف کے مسلط کردہ ایجنڈے پر کاربند حکومت تیزی سے عوامی حمایت کھورہی ہے۔حکومت بغیر کسی مزاحمت کے آئی ایم ایف کے سامنے سرنگوں ہوچکی ہے۔حکمرانوں کی نااہلی کا خمیازہ عوام کو بھگتنا پڑرہا ہے۔عوام نے تمام سیاسی جماعتوں کو دیکھا اور پرکھا ہے ۔کوئی جماعت ملک و قوم کے مسائل حل نہیں کرسکی۔پی ٹی آئی کی 10ماہ کی مایوس کن کارکردگی نے ثابت کردیا ہے کہ اس سے کسی بہتری کی امید لگانا اور کسی خیر کی توقع رکھنا خود فریبی کے سوا کچھ نہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے منصورہ میں مرکزی ذمے داران کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اجلاس میں سیکرٹری جنرل امیر العظیم ،نائب امرا لیاقت بلوچ،میاں محمد اسلم،راشد نسیم،اسد اللہ بھٹو،ڈاکٹرفریداحمد پراچہ،عبدالغفار عزیز،ڈاکٹر معراج الہدیٰ صدیقی اور ڈپٹی سیکرٹریز بھی موجود تھے۔سینیٹر سرا ج الحق نے کہا کہ وزیراعظم کرپشن اور قرضوں کے حسابات اپنے ارد گرد بیٹھے ان مشیروں سے لیں جو ماضی کے حکمرانوں کے ساتھ قرضے لینے میں پیش پیش رہے ہیں۔ حالیہ گرفتاریاں مکافات عمل ہے ۔ جو لوگ ان گرفتاریوں کا کریڈٹ لے رہے ہیں جب کرپشن کے واقعات ہورہے تھے ،تو یہ خود اس کرپٹ ٹولے کے ساتھ ہوا کرتے تھے ۔ انہوںنے کہاکہ قومی بجٹ میں عوام سے کیے گئے وعدوں کی تکمیل کے بجائے اسے آئی ایم ایف کی فرمائشیں پوری کرنے کا ذریعہ بنایا گیا ہے اور ایک دفعہ پھر عوامی توقعات سے یوٹرن لے کر آئی ایم ایف کی خوشنودی حاصل کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عوام نے بجٹ کو مسترد کردیا ہے ۔اس بجٹ میں مہنگائی اور بے روزگاری پر قابو پانے کے لیے کوئی ٹھوس لائحہ عمل نہیں دیا گیابلکہ اس بجٹ سے مہنگائی اور بے روزگاری مزید بڑھے گی،کاروبار ٹھپ ہوں گے، زراعت اور صنعت کی حالت مزید پتلی ہوجائے گی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے اپنے انتخابی منشور میں عوام سے جو وعدے کیے تھے ان کو پورا کرنے کی طرف بھی کوئی قدم نہیں اٹھایا گیا۔انہوںنے کہاکہ جماعت اسلامی 16 جون کو عوام کی ترجمانی کے لیے لاہور کے مال رو ڈ پر بڑا عوامی مظاہرہ کرے گی ۔لاہور (نمائندہ جسارت) امیر جماعت اسلامی لاہور ذکر اللہ مجاہد نے 16 جون بروز اتوارلاہورمال روڈ پر آئی ایم ایف کی غلامی ، معاشی بدحالی ، کمر توڑ مہنگائی اور عوام دشمن بجٹ کے خلاف عوامی مارچ کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ مارچ کی قیادت امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق سمیت جماعت اسلامی کی مرکزی ، صوبائی اور ضلعی قیادت کرے گی۔ عوامی مارچ میں مرد و خواتین کی بڑی تعداد شریک ہو گی۔ انہوں نے پریس کلب لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ آئی ایم ایف کی غلامی نے حکمرانوں کو قوم کا خون چوسنے پرلگا دیا ہے ۔ وفاقی بجٹ میں بھی موجودہ حکمرانوں نے قوم کو مایوس کیا ہے ۔ بجٹ میں 105 ارب کے نئے اضافی ٹیکسز غربیوں کے منہ سے روٹی کا نوالہ چھیننے کے مترادف ہے۔ مہنگائی کے حوالے سے حکومت نے اپنا وتیرہ نہ بدلا تو پوری قوم سٹرکو ں پر نکلنے پر مجبور ہو گی ۔ تبدیلی اور مدینے کی ریاست کا نعرہ لگانے والے حکمران مکمل طور پر ناکام ہوچکے ہیں ۔ بجٹ کے نام پر غریبوں اور سفید پوش طبقات کا استحصال کیا جا رہا ہے ۔ حکمرانوں نے عوام کو ریلیف فراہم کرنے کے بجائے روزمرہ استعمال میں آنے والی اشیا گھی ، چینی ، گوشت ، سی این جی، مشروبات سمیت دیگر چیزوںکے نرخ بڑھا دیے ہیں جو قابل مذمت ہے ۔ عام آدمی 2وقت کی روٹی کے کے لیے ترس رہا ہے اور حکومتی وزرا کے لیے 50 ملین گھروں کی آرائش کا کوٹا رکھنا غریبوں پر ظلم ہے۔ ملک وقوم کو آئی ایم ایف کا غلام بنا دیا گیا ہے جس کی وجہ سے ہمارے معاشی فیصلے حکمران نہیں بلکہ آئی ایم ایف کی ہدایات پر ہو رہے ہیں جس کا واضح ثبوت وفاقی بجٹ کی صورت میں قوم کے سامنے ہے ۔پریس کانفرنس کے دوران مرکزی سیکرٹری اطلاعات جماعت اسلامی پاکستان قیصر شریف ، صدر جے آئی یوتھ لاہور صہیب شریف، نائب امیر جماعت اسلامی لاہور ضیا الدین انصاری، صدر انتظامی کمیٹی عوامی مارچ چودھری محمودالاحد ، سیکرٹری انتظامی کمیٹی عبدالعزیز عابد ، سیکرٹری اطلاعات جماعت اسلامی لاہور اے ڈی کاشف، جماعت اسلامی صوبہ پنجاب کے ترجمان محمد فاروق چوہان ،خواتین رہنما جماعت اسلامی لاہور آمنہ ثاقب ، انیلہ محمود ، راشدہ شاہین ، نسیم اختر ،شاہدہ انصاری سمیت دیگر قائدین نے شرکت کی ۔ اس موقع پرقائدین نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ملک و قوم کو آئی ایم ایف کے پاس گروی رکھنے والے حکمرانوں نے قوم کو مہنگائی کے سونامی میں ڈبو دیا ہے ۔ پاکستان کے معاشی اور قومی مسائل کا واحد حل قرآن وسنت کے نظام میں ہے ۔