بی این پی کے 6 نکات کو درست سمجھتے ہیں،بلاول سے اختر مینگل کی ملاقات

76
اسلام آباد: چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول زرداری سے سردار اختر مینگل ملاقات کررہے ہیں
اسلام آباد: چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول زرداری سے سردار اختر مینگل ملاقات کررہے ہیں

اسلام آباد(آئی این پی،نمائندہ جسارت) پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول زرداری نے کہا ہے کہ پیپلزپارٹی بی این پی کے چھ نکات کو بالکل درست سمجھتی ہے۔ بلوچستان کے عوام کی ہمیشہ حق تلفی کی گئی ہے۔بلوچستان کے عوام کے زخموں کا مداوا کیے بغیر ملکی ترقی کا ہر تصور ناپائیدار ہوگا۔ پیپلزپارٹی نے آغاز حقوق بلوچستان دے کر بلوچ عوام کو حقوق کی فراہمی کی ابتدا کی۔منگل کو پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری سے بی این پی مینگل کے سربراہ سردار اختر مینگل نے ملاقات کی۔زرداری ہاؤس اسلام آباد میں ہونے والی اہم ملاقات میں ملکی سیاسی صورت حال پر گفتگو کی گئی۔ملاقات میںبدترین معاشی صورت حال کے تناظر میں پیدا ہونے والی عوامی بے چینی اور ردعمل بھی زیربحث آئی۔سردار اختر مینگل نے کہا کہ سابق صدر آصف زرداری کی گرفتاری پر اظہار یکجہتی کیلیے آپ کے پاس آیا ہوں۔چیئرمین بلاول زرداری نے یکجہتی پر سردار اختر مینگل کا شکریہ ادا کیا۔سردار اختر مینگل نے کہا کہ حکومت 10 ماہ میں بی این پی کے چھ نکات پر عمل درآمد نہیں کرسکی۔اس سے قبل پیپلز پارٹی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ سیاستدانوں کی گرفتایوں سے کٹھ پتلی حکومت مضبوط نہیں ہوگی،سلیکٹڈ وزیر آعظم کے حوصلے پست ہو چکے ہیں ۔علاوہ ازیں پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول زرداری نے کہا ہے کہ سندھ میں گورنرراج لگاؤ، عوام حشرکردیں گے۔وفاقی حکومت سندھ میں گورنر راج لگانے کا اپنا شوق پورا کر کے دیکھ لے۔ انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سندھ حکومت کے خلاف روز اول سے سازش ہو رہی ہے۔ابھی جے آئی ٹی رپورٹ بھی مکمل نہیں ہوئی تھی تو سندھ حکومت گرانے کی باتیں ہو رہی تھیں۔ بلاول نے کہا کہ وفاقی حکومت سازش کر کے سندھ حکومت گرانے کی کوشش کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت سندھ میں گورنر راج لگانے کا خواب پورا کر لے پھر دیکھیں گے عوام آپ کا کیا حشر کرتی ہے۔