روس کا جولائی میں ترکی کو دفاعی نظام فراہم کرنے کا اعلان

35

ماسکو (انٹرنیشنل ڈیسک) روس نے جولائی میں میزائل دفاعی نظام ایس 400 ترکی کے حوالے کرنے کا اعلان کردیا۔ اس بات کا اعلان کریملن کے مشیر یوری اشاکوف نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ دفاعی نظام کی خریداری سے نالاں امریکا نے ترکی کو دھمکی دے رکھی ہے کہ اگر وہ روس کے ساتھ سودے سے دستبردار نہیں ہوا تو وہ انقرہ کے ساتھ ایف 35 لڑاکا طیاروں کی خریداری اور اس کے فاضل پرزوں کی تیاری کے پروگرام کو معطل کردے گا۔ دوسری جانب ترکی امریکی دھمکیوں کے باوجود روس سے میزائل دفاعی نظام خریدنے پر قائم ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اس صورت میں ترکی کو امریکی پابندیوں کا سامنا کرنا پڑے گا، جس سے اس کی معیشت اور کرنسی پر منفی اثرات مرتب ہوں گے،جب کہ نیٹو میں پوزیشن بھی متاثر ہو سکتی ہے۔ ادھر امریکا میں ایریزونا ائربیس پر ترک پائلٹوں کی ایف35 لڑاکا طیارے اڑانے کی تربیت کا عمل روک دیا گیا۔ امریکی حکام کا موقف ہے کہ روسی میزائل نظام امریکی ایف35 طیاروں کے لیے خطرے کا سبب بن سکتا ہے۔ پینٹاگان کے ترجمان کرنل مائیک اینڈروز کے مطابق ترکی کی پالیسی میں تبدیلی کیے بغیر ایف 35 طیاروں کے پروگرام میں اس کی شرکت ختم کردی جائے گی۔ پینٹاگان نے رواں سال اپریل کے اوائل میں اعلان کیا تھا کہ وہ ترکی کو امریکی ایف 35 لڑاکا طیاروں سے متعلق ساز و سامان کی تمام کھیپوں کی حوالگی کو مشروط کردے گا۔
یونانی جزیرے کے قریب کشتی ڈوب گئی‘ 6 مہاجر جاں بحق
ایتھنز (انٹرنیشنل ڈیسک) یونانی جزیرے لیسبوس کے قریب مہاجرین کی ایک کشتی ڈوبنے کے نتیجے میں 6 افراد ہلاک ہو گئے۔ یونانی کوسٹ گارڈز کے مطابق حادثے کا شکار ہونے والی کشتی میں سوار 57 مسافروں کو بچا لیا گیا ہے۔ یاد رہے کہ رواں برس بحیرہ روم پار کر کے یورپ پہنچنے کی کوشش میں بڑی تعداد میں مہاجرین ہلاک ہو چکے ہیں۔ یونان میں اس وقت 70 ہزار کے قریب مہاجرین موجود ہیں جن میں سے زیادہ تر کا تعلق شام سے ہے۔