اسٹاک مارکیٹ میں کاروبار کا اختتام مثبت زون میں ہوا

98

کراچی ( اسٹاف رپورٹر) نئے مالی سال کے بجٹ کے حوالے سے ٹیکسز میں اضافے کے خدشات اور سرمایہ کاری پالیسی پر تحفظات کے پیش نظر پاکستان اسٹاک مارکیٹ کاروباری اتار چڑھائو کی لپیٹ میں رہی تاہم کاروبار کا اختتام مثبت زون میں ہوا اور انڈیکس 34500پوائنٹس سے بڑھ کر 34600پوائنٹس پر بند ہوا ،تیزی کے سبب مارکیٹ کے سرمائے میں 25ارب روپے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس کے نتیجے میں سرمائے کا مجموعی حجم 70کھرب روپے سے تجاوز کر گیا ۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں منگل کو کاروبار کے آغاز کے دوران ملا جلا رجحان دیکھا گیا کاروباری سرگرمیوں کے دوران ایک موقع پر انڈیکس 34262پوائنٹس کی کم ترین سطح تک گر گیا بعد ازاں توانائی ،سیمنٹ سمیت دیگر شعبوں میں سرمایہ کاری کی بدولت انڈیکس 34798پوائنٹس کی بلند سطح کو چھو گیا تاہم کاروبار کے اختتام پر انڈیکس 92.30پوائنٹس کے اضافے سے 34567.55پوائنٹس سے بڑھ کر 34659.85پوائنٹس پر جا پہنچا اسی طرح 37.70پوائنٹس کے اضافے سے کے ایس ای30انڈیکس 16313.93پوائنٹس اور کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 25350.62پوائنٹس سے بڑھ کر 25442.94پوائنٹس ہو گیا ۔کاروباری تیزی کے سبب مارکیٹ کے سرمائے میں 25 ارب 47 کروڑ 76 لاکھ88 ہزار 843 روپے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس کے نتیجے میں سرمائے کا مجموعی حجم 69کھرب95ارب 80کروڑ87لاکھ 57ہزار 17روپے سے بڑھ کر 70کھرب21ارب 28کروڑ64لاکھ 45ہزار 860روپے ہو گیا ۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں زیادہ سے زیادہ 4ارب روپے مالیت کے 11کروڑ69لاکھ 31ہزار حصص کے سودے ہوئے جبکہ پیر کو 3ارب روپے مالیت کے 9کروڑ17لاکھ 36ہزار حصص کے سودے ہوئے تھے ۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں منگل کو مجموعی طور پر 314کمپنیوں کا کاروبار ہوا ۔ جس میں سے 177کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ ،117میں کمی اور 20کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا ۔کاروبار کے لحاظ سے کے الیکٹرک لمیٹڈ 90لاکھ41ہزار ،یونٹی فوڈز لمیٹڈ 72لاکھ56ہزار ،ٹی آر جی پاک لمیٹڈ 72لاکھ13ہزار ،فوجی سیمنٹ 68لاکھ51ہزار اور فوجی فوڈز لمیٹڈ 57لاکھ60ہزار حصص کے سودوں سے سرفہرست رہے۔قیمتوں میں اتار چڑھائو کے اعتبار سے انڈس موٹرز کمپنی کے حصص کی قیمت میں 34.22روپے کا اضافہ ہوا جس سے اسکے حصص کی قیمت 1156.40روپے ہو گئی اسی طرح 30 روپے کے اضافے سے صنوفی ایونٹس کے حصص کی قیمت 670روپے پر جا پہنچی جبکہ وائتھ پاک لمیٹڈ کے حصص کی قیمت 39.85روپے کی کمی سے 757.15روپے اور ماری پیٹرولیم کے حصص کی قیمت 21.77روپے کی کمی سے 1080.25روپے پر آ گئی۔