امریکی محصولات کے باوجود چین کی برآمدات میں اضافہ

34

بیجنگ (اے پی پی) چین سے ملنے والے نئے تجارتی اعداد و شمار سے ظاہر ہوتا ہے کہ بلند امریکی محصولات کے باوجود برآمدات میں دوبارہ اضافہ ہو رہا ہے۔ چین کے کسٹم حکام کے مطابق، ماہرین کے تجزیوں کے برعکس برآمدات میں ایک سال قبل کے مقابلے میں 1.1 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔ رائٹرز کی جانب سے جاری کردہ ماہرین کے ایک سروے میں پیشگوئی کی گئی تھی کہ اپریل میں کمی کے بعد مئی میں چین سے ترسیلات میں تقریباً 4 فیصد کمی واقع ہو گی۔ماہرین اقتصادیات کا کہنا ہے کہ چینی برآمد کنندگان نے نئیمحصولات سے بچنے کے لیے امریکا کو برآمدات کی جلد ترسیل کی۔ یاد رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے نئے محصولات عائد کرنے کی چین کو دھمکی دے رکھی ہے۔اْدھر، درآمدات میں 8.5 فیصد کمی آئی۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ ملکی مانگ میں کمزوری کی اس نئی علامت کو دیکھتے ہوئے چین معیشت کو تحریک دینے والے اقدامات میں اضافہ کر سکتا ہے۔چین کی امریکہ کے ساتھ تجارت میں عدم توازن خاص کر توجہ کا مرکز ہے۔ یہ تجارتی فرق دونوں ملکوں کے مابین طویل عرصے سے کشیدگی کا باعث ہے۔ مئی میں تجارت کا فرق چین کے حق میں 26.8 ارب ڈالر تھا جو ایک سال قبل اسی عرصے کے مقابلے میں 9 فیصد زیادہ تھا۔