بجٹ تقریر کے اختتام  پر وزیراعظم کا فتح کا نشان

28

اسلام آباد (نمائندہ جسارت) بجٹ تقریر کے اختتام پر وزیراعظم عمران خان
نے اپوزیشن کو فاتحانہ انداز میں اشارے کیے۔ ایوان میں بجٹ تقریر کے دوران اپوزیشن رہنماؤں کی جانب سے حکومت کے خلاف نعرے بازی کی گئی۔اپوزیشن اراکین نے ایوان میں گو نیازی گو کے بھی نعرے لگائے۔اس موقع پر اپوزیشن کے کئی رہنماؤں نے پلے کارڈز بھی اْٹھا رکھے تھے جس پر تحریر تھا کہ یہ بجٹ آئی ایم ایف کا بجٹ ہے۔ اپوزیشن کا کہنا تھا کہ ہم یہ بجٹ مسترد کرتے ہیں۔ اپوزیشن رہنما بجٹ تقریر کے دوران شور شرابا کرنے کے ساتھ ساتھ احتجاجاً بجٹ کی کاپیاں پھاڑ کر ہوا میں لہراتے بھی رہے۔اپوزیشن کا احتجاج مزید بڑھا تو حکومتی ارکان بھی اپوزیشن کے سامنے آ گئے اور ہاتھوں کی زنجیر بنا لی۔ جبکہ حماد اظہر شور شرابے اور نعرے بازی کے باوجود ایوان میں بجٹ تقریر کرتے رہے۔ بجٹ تقریر کے اختتام پر وزیراعظم عمران خان نے اپوزیشن رہنماؤں کو فاتحانہ انداز میں اشارے کیے۔ اس وقت وزیراعظم عمران خان کے چہرے پر ایک فاتحانہ مْسکراہٹ بھی تھی گویا وہ کہہ رہے ہوں کہ اپوزیشن کا اتنا زیادہ احتجاج کسی کام نہ آیا۔ ہم نے اپوزیشن کے احتجاج کے باوجود کامیابی سے ایوان میں بجٹ پیش کر دیا ہے۔
فتح کا نشان