سندھ ہائیکورٹ نے وائس چانسلر سندھ یونیورسٹی کو عہدے پر بحال کردیا

44

حیدرآباد(اے پی پی)سندھ ہائیکورٹ سرکٹ بینچ حیدرآباد نے وائس چانسلر سندھ یونیورسٹی فتح محمد برفت کی معطلی کا حکم نامہ منسوخ کردیا۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے انہیں 31مئی کو معطل کرکے کرپشن کی تحقیقات کا حکم دیا تھا،عدالت نے صوبائی حکومت سے20جون تک جواب طلب کرلیا۔ جسٹس ندیم کی سربراہی میں قائم2 رکنی بینچ نے وائس چانسلر سندھ یونیورسٹی کی درخواست پر فیصلہ سناتے ہو ئے انہیں معطل کرنے کا نوٹیفکیشن منسوخ کردیا ہے۔ عدالت نے وائس چانسلر کے خلاف تحقیقات کے دیگر نوٹیفکیشن بھی معطل کردیے ہیں۔ وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے ڈاکٹر فتح محمد برفت کو معطل کرکے چیئرپرسن منصوبہ بندی و ترقیات ناہید شا ہ کو تحقیقاتی افسر مقرر کیا تھا۔وائس چانسلر کے وکیل رفیق کلوڑ نے عدالت عالیہ میں درخواست جمع کرائی جس میں نوٹیفکیشن کو منسوخ کرنے کی استدعا کی۔ انہوں نے دلائل دیتے ہو ئے کہاکہ حکومت کا فیصلہ بدنیتی پر مبنی ہے وہ وائس چانسلر کو ہٹا نا چاہتی ہے جبکہ صوبائی حکومت کا یہ نوٹیفکیشن جس میں وی سی کو معطل کیا گیا یونیورسٹی کے قوانین کے بھی خلاف ہے۔ عدالت نے وائس چانسلر کو ان کے عہدے پر بحال کرتے ہو ئے سندھ حکومت سے20جون تک جواب طلب کرلیا ہے۔ وائس چانسلر سندھ یونیورسٹی ڈاکٹر فتح محمد برفت نے عدالتی فیصلے کو حق و سچ کی فتح قرار دیتے ہو ئے کہاکہ مجھ پر لگائے گئے الزامات بے بنیاد ہیں، مجھے عدالت سے انصاف کی توقع ہے ۔