اے این پی نے پختونوں کو بیچا اور مال بنایا‘ شوکت یوسفزئی

52

پشاور (اے پی پی) خیبر پختونخوا کے وزیر اطلاعات و تعلقات عامہ شوکت یوسفزئی نے کہا ہے کہ اے این پی کے دور کی طرح کا بدترین دور اللہ کبھی پاکستان میں نہ لائے ‘ اس دور میں پختونوں کو رسوا کیا گیا‘ گندم اور آٹا انہی کے دور میں بلیک پر فروخت ہوا‘ اے این پی کے دور میں پختون خوار اور ذلیل ہوئے ‘ تاریخ کی سب سے بڑی دہشت گردی ان کے دور میں ہوئی‘ عوامی نیشنل پارٹی کے دور میں پختونوں کی زندگی عذاب بن گئی تھی‘ اے این پی نے پختونوں کو بیچا اور مال بنایا‘ یہاں تک کہ کلاس فور کی نوکریاں بھی برائے فروخت کر دی تھیں اور غریب کو اس کا حق ملنا مشکل ہو گیا تھا ‘ وہ عوامی نیشنل پارٹی کے احتجاج پر ردعمل دے رہے تھے۔ وزیر اطلاعات نے کہا کہ اے ین پی کا احتجاج سمجھ سے بالاتر ہے‘ ان کے دور میں پختونوں کے لیے کیا کیا گیا ؟ کیا عوام دوبارہ چاہیں گے کہ دہشت گردی کا دور واپس لوٹ آئے؟ صوبے میں دوبارہ کرپشن کا دور دورہ ہو ؟ ہر گز نہیں اسی لیے اے این پی کے احتجاجی جلسے ناکام ہو رہے ہیں اور کہیں پر بھی لوگ بڑی تعداد میں جمع نہیں ہو رہے‘ اسفندیار ولی اور ایمل ولی اپنے حلقے میں درجن بھر سے زیادہ لوگ اکٹھے نہ کر سکے۔ انہوں نے کہا کہ لوگوں کو یاد ہے کہ اے این پی کی حکومت میں خود اسفند یار ولی خوف سے پختونخوا نہیں آتے تھے‘ چارسدہ جانا تو دور کی بات تھی ‘آج اللہ کے فضل سے ہمارے دور میں امن آیا ہے وہ آزادانہ گھوم رہے ہیں ۔