پی ٹی آئی کے وکلا سپریم کورٹ بار کے فیصلے کیخلاف میدان میں آگئے

71

کراچی (اسٹاف رپورٹر)عدالت عظمیٰ کے ججوں کے خلاف ریفرنسز دائر کرنے کے معاملے پر پی ٹی آئی کے وکلا بھی میدان میں آگئے ،پی ٹی آئی وکلا نے سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے صدر امان اللہ کنرانی کا گھیراؤ کرلیا اور 14 جون کوہڑتال نا منظور، نا منظور کے نعرے لگائے۔ پی ٹی آئی سندھ اور کراچی کے صدور کی سربراہی میں سندھ ہائی کورٹ میں ریلی نکالی گئی، پی ٹی آئی کراچی کے صدر مختار جونیجو کا کہنا تھا کہ ایکشن کمیٹی کے تحت مظاہرہ کر رہے ہیں، پی ٹی آئی وکلا کی جانب سے سٹی کورٹ میں بھی مظاہرہ کیا گیا۔ پی ٹی آئی کے وکلا کا امان اللہ کنرانی سے کہنا تھا کہ آپ کے فیصلے کو نہیں مانتے، جبکہ امان اللہ کا کہنا تھا کہ ہڑتال کا فیصلہ متفقہ ہے،14جون کوسپریم کورٹ اور ہائیکورٹس میں ہڑتال ہوگی ، سپریم کورٹ میں 14جون کودھرنادیں گے،انہوں نے کہا کہ قاضی فائز عیسیٰ کیخلاف ریفرنس بدنیتی پرمبنی ہے، انکوائری سے پہلے میڈیاٹرائل اورریفرنس داخل کرنا بدنیتی ہے۔ سپریم کورٹ بارایسوسی ایشن کے صدر امان اللہنے ممبر ایگزیکٹیو کمیٹی صفدر کھوکھر کے ساتھ سندھ ہائیکورٹ،کراچی بار کے صدور سے ملاقات کی اور 14 جون کو احتجاج،ہڑتال اور دھرنے میں شرکت کی دعوت دی۔کراچی بارنے صدرسپریم کورٹ کومکمل حمایت کایقین دہانی کرائی ،جبکہ سابق صدر کراچی بار محمود الحسن کا کہنا تھا کہ ہم عدلیہ کی آزادی کے لیے آخرحدتک جائیں گے۔