زائدچارجڈ پارکنگ فیس وصولی پر اسسٹنٹ ڈائریکٹر سمیت4 ملازم معطل

37

کراچی( اسٹا ف رپورٹر)مئیر کراچی وسیم اختر نے ہل پارک پر زائد چارجڈ پارکنگ فیس وصول کرنے پر سخت ایکشن لیتے ہوئے چارجڈ پارکنگ ڈپارٹمنٹ کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر سمیت چار ملازمین کو معطل کر دیا جب کہ ہل پارک کی حدود میں دونوں سائیڈ سے چارجڈ پارکنگ فیس ختم اور کنٹریکٹر کو بلیک لسٹ کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق مئیر کراچی کو اطلاع ملی تھی کہ ہل پارک کی حدود میں بلدیہ عظمی کراچی کا محکمہ چارجڈ پارکنگ متعلقہ کنٹریکٹر سے مل کر شہریوں سے زائد فیس وصول کر رہا ہے جس کے لیے مئیر کراچی نے اپنے طور پر معلومات حاصل کی تو معلوم ہوا کہ وہاں 100 روپے فی گاڑی پارکنگ فیس وصول کی جا رہی ہے۔ جس پر مئیر کراچی نے سخت نوٹس لیتے ہوئے محکمہ چارجڈ پارکنگ کے اسسٹنٹ ڈائرکٹر محمد احمد انسپکٹر شعیب احمد، محمد ریاض۔ کلرک ارشد قریشی نائب قاصد جرمان اور محمد عامر کو فوری طور پر معطل کر دیا ہے جب کہ ہل پارک کی حدود میں آئند چارجڈ پارکنگ فیس وصول کرنے پر مکمل پابندی اور کنٹریکٹر کو بلیک لیسٹ کر دیا۔یہ کنٹریکٹر آئیندہ کے ایم سی میں کسی نوعیت کا کام نہیں کر سکے گا۔ مئیر کراچی نے کہا کہ یہ بہت ہی افسوس ناک بات ہے کہ کے ایم سی کی حدود اور چار دیواری کے اندر ہمارا کنٹریکٹر اور محکمہ کا عملہ غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث ہے جو کسی بھی صورت میں قابل معافی نہیں۔ انہوں نے کہا ہے کہ اس کی مکمل تحقیقات کرائی جائے گی اگر عملے کے اور بھی اہلکار یا افسران ملوث پائے گئے تو ان کے خلاف بھی کارروائی ہو گی۔