دھونی گلووز معاملہ، آئی سی سی اور بھارتی کرکٹ بورڈ آمنے سامنے

174

دھونی کی جانب سے آرمی کے نشان والے گلووز پہننے کے معاملے نے آئی سی سی اور بھارتی کرکٹ بورڈ کو آمنے سامنے کھڑاکردیا۔

بی سی بی نے دھونی کا ساتھ دینے کا اعلان کرتے ہوئے موقف اختیار کیا ہے کہ دھونی نے آئی سی سی کے کسی قوانین کی خلاف ورزی نہیں کی، اسے یہ گلووز پہن کر کیپنگ کرنے کی اجازت دی جائے۔سابق کپتان نے جنوبی افریقا کے خلاف میچ میں آرمی کے نشان والے یہ گلووز استعمال کیے تھے جس پر آئی سی سی نے ایکشن لیتے ہوئے دھونی کو بھارتی فوج کے لوگو والے گلووز پہننے سے منع کیا تھا۔

 بھارتی بورڈ کے آفیشل ونود رائے کا کہناہے کہ دھونی کے گلووز پر نشان آرمی کا ہے اور نہ ہی اس کا کمرشل مقصد کے لیے استعمال ہے۔ بھارتی بورڈ کے آفیشل نے یہ بھی واضح کیا کہ بی سی سی آئی کے چیف ایگزیکٹو راہول جوہری اگلے میچ سے پہلے آئی سی سی حکام سے ملاقات کرکے انہیں اس ایشوپر قائل کریں گے۔

آئی سی سی قوانین کے تحت آئی سی سی کے کسی بھی ایونٹ میں مذہبی، سیاسی اور لسانیات کو ہوا دینے والی کٹ کا دوسری جگہوں پر استعمال نہیں کیا جاسکتا۔ بھارتی ٹیم نے 8مارچ 2019کو پلوامہ واقعہ کی بنیاد بناکر فوجی ٹوپیاں پہن کر میچ کھیلا تھا، جس پر آئی سی سی نے یہ موقف اختیارکیاتھا کہ ایسا کرنے کا مقصد فنڈ ریزنگ تھا اور بھارتی بورڈ نے اس کی پہلے سے اجازت لی تھی۔