اسلام آباد کے ساتھ مزاکرات کیلیے تیار ہیں،راستہ پاکستان ہی طے کریگا،بھارت

78

نئی دہلی(آن لائن) جموں وکشمیر میں امن و امان خراب کرنے کی کسی بھی کوشش کو ناقابل برداشت قرار دیتے ہوئے بھارتی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے واضح کیا ہے کہ سرحدیں محفوظ ہیں اور فوج کنٹرول لائن پر پاکستانی جارحیت کا جواب دے رہی ہے ۔ لوک سبھا انتخابات میں لکھنو سے بھاری ووٹوں سے جیت حاصل کرنے کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے بھارتی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے کنٹرول لائن پر پیدا شدہ صورت حال کے لئے پاکستان کو ذمہ دار قرار دیتے ہوئے کہاکہ سرحد پار دراندازی کو یقینی بنانے کے لئے سیز فائر کی بار بار خلاف ورزی کی جا رہی ہے اور خفیہ ایجنسیوں نے یہی اطلاع حکومت کو فراہم کی ہے کہ سیز فائر کی آڑ میں زیادہ سے زیدہ جنگجوؤں کو کشمیر میں داخل کرنے کی کوشش کی جا رہی ہیں اور اس سلسلے میں پاکستانی فوج کی جانب سے بار بار سیز فائر کی خلاف ورزی کی جا رہی ہے ۔ تاہم انہوں نے کہا کہ جموں وکشمیر میں امن و امان خراب کرنے کی کسی کو اجازت نہیں دی جائے گی ۔ انہوں نے کہاکہ بھارت اور پاکستان کے درمیان مذاکرات ہو سکتے ہیں لیکن اس دوران پاکستان کو یہ طے کرنا ہو گا کہ باہمی طور پر کس انداز میں مذاکرات کے لئے تیار ہو جاتا ہے انہوں نے کہا کہ بھارت ہی نہیں ساری دنیا جانتی ہے کہ دہشت گردی کون پھیلا رہا ہے ۔