حکمرانوں کے فیصلوں کی وجہ سے ملک و قوم پر سودی معیشت مسلط ہے،حافظ نعیم

93
امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن گلشن اقبال میں دعوت افطار سے خطاب کررہے ہیں
امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن گلشن اقبال میں دعوت افطار سے خطاب کررہے ہیں

کراچی(اسٹاف رپورٹر) جماعت اسلامی کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمن نے کہاہے کہ قرآن کتاب انقلاب ہے، یہ صرف انفرادی زندگیاں تبدیل نہیں کرتی بلکہ حکومت،ریاست،معیشت،معاشرت ،قانون کو بھی بدل دیتی ہے۔قرآن سود کو حرام اور اللہ و رسولؐ کے ساتھ کھلی جنگ قرار دیتا ہے ، آج بدقسمتی سے سودی معیشت کی وجہ سے ملک وقوم پر یہ جنگ مسلط ہے۔ حکمران ترقی اور مختلف ضروریات کے نام پر سودی قرضے حاصل کر رہے اور اس کے بدلے آئی ایم ایف ، ورلڈ بینک ہمارے ایمانی تقاضوں کے منافی مطالبات منوانے کی کوشش کر رہے ہیں،نصاب سے قرآنی آیات بالخصوص جہاد سے متعلق آیات کو نکالنا ،روزمرہ کی اشیائے ضرورت سے سبسڈی ختم کرنا ، شکیل آفریدی کو امریکا کے حوالے کرنے جیسے مطالبات انہی قرضوں کی وجہ سے پاکستان سے کیے جا رہے ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے علاقہ البلال ابو الحسن اصفہانی روڈ کے تحت ایک مقامی ہال میں سالانہ دعوت افطار سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر ضلع شرقی کے نائب امیر انجینئر عزیز الدین ظفر، جماعت اسلامی کراچی کے سیکرٹری نشرواشاعت زاہد عسکری ، ناظم علاقہ ناصر نقوی ،نائب ناظم علاقہ شمیم انصاری اور دیگر موجود تھے ۔حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ رمضان المبارک قرآن کا مہینہ ہے،یہ 30 دن کی تربیتی ورکشاپ ہے ،جس کے ذریعے بندہ مومن روزے کے تمام تقاضے پورے کرتے ہوئے روحانی طور پر اللہ کا قرب حاصل کرتا ہے اور جنت کا حقدار بننے کی کوشش کرتا ہے ، قرآن ان احکامات اور ہدایت کا مجموعہ ہے، اسے تھامنے اور اس پر عمل کرنے سے افراد اور قوموں کو عروج حاصل ہوتا ہے، یہ خود اپنے بارے میں کہتا ہے کہ اس میں دلوں کے امراض کی شفا ہے۔ یہ زندہ کتاب انسانی زندگیوں میں حرارت پیدا کرتی ہے ، انہیں اپنے معاملات ، معمولات تبدیل کرنے کے لیے آمادہ اور تیار کرتی ہے ، اس لیے ضروری ہے کہ ہم نزول قرآن کے ماہ مبارک میں کتاب ہدایت سے اپنے تعلق کو تازہ اور مضبوط کریں۔ اپنے شب و روز کا محاسبہ کرتے ہوئے آئندہ زندگی کی منصوبہ بندی کریں۔انہوں نے مزید کہاکہ اس ماہ مبارک میں جہاں ایک جانب رحمتیں اور برکتیں ہیں وہیں ، دوسری طرف ریاست مدینہ بنانے کے دعویداروں نے ظالمانہ اقدامات اور فیصلوں کے ذریعے عام فرد کی زندگی مشکل سے مشکل تر بنا دی ۔ہر آنے والا دن ڈالر کی قیمت میں اضافے اور روپے کی قدر میں کمی کی خبر لے کر آتا ہے ، جس کی وجہ سے لوگوں میں بے چینی اور اس نظام سے بے زاری میں اضافہ ہو رہا ہے، ایسی صورتحال میں ضروری ہے کہ ہم سب قرآن کی فراہم کردہ راہ نمائی کی روشنی میں متحد ہو کر حالات بدلنے کی منظم کوششیں کریں ۔جماعت اسلامی اس حوالے سے جدوجہد میں مصروف ہے اور عوام سے توقع کرتی ہے کہ وہ بھی اس کوشش میں معاون بنیں گے۔