پی ٹی ایم رہنمائوں پر افغان دہشتگردوں کے حملوں کا خدشہ ہے،پولیس کا انتباہ

75

ڈیرہ اسماعیل خان( آن لائن ) پولیس نے تحریری انتباہ جاری کیا ہے جس میں خبردار کیا گیا ہے کہ افغانستان کے دہشت گرد پشتون تحفظ موومنٹ ( پی ٹی ایم) کے قائدین کو ہدف بنا سکتے ہیں۔ تحریری انتباہ کے مطابق پی ٹی ایم رہنماؤں علی وزیر، مولوی قاضی طاہر، حیات اور شیر اللہ کو احتیاط کی ضرورت ہے۔امریکی نشریاتی ادارے کے مطابق پولیس نے تحریری طور پر آگاہ کیا ہے کہ چاروں افراد بطور خاص غیر ضروری سفر نہ کریں۔ اپنے پروگرام سے کسی کو آگاہ نہ کریں، عوامی اجتماعات سے اجتناب برتیں اور اپنے گھر کی حفاظت کا خاص خیال رکھیں۔ڈیرہ اسماعیل خان کے ڈی پی او سلیم ریاض نے اس ضمن میں ایک انٹرویو میں بتایا کہ قانون نافذ کرنے والے ادارے پی ٹی ایم رہنماؤں کو سرکاری گارڈز فراہم کرنے کے لیے تیار ہیں۔ پشتون تحفظ موومنٹ کے مرکزی رہنما علی وزیر نے بھی اس بات کی تصدیق کی کہ انھیں پولیس کی جانب سے تحریری بیان ملا ہے۔ علی وزیر نے الزام عائد کیا کہ یہ خدشات دراصل ہمیں گھروں تک محصور رکھنے کا ایک حربہ ہیں۔مولانا قاضی طاہر نے بھی امریکی میڈیاکو بتایا کہ ڈیرہ اسماعیل خان کی پولیس کی جانب سے انھیں اطلاع موصول ہوئی ہے۔