انڈونیشیا: انتخابی نتائج کے اعلان پر ہنگامے‘ 6 افراد جاں بحق

78
جکارتا: پولیس اور مظاہرین کے درمیان جھڑپ ہورہی ہے
جکارتا: پولیس اور مظاہرین کے درمیان جھڑپ ہورہی ہے

جکارتا (انٹرنیشنل ڈیسک) انڈونیشیا میں گزشتہ ماہ ہونے والے صدارتی انتخابات میں جوکو ویدودو کی ایک بار پھر فتح کا اعلان ہونے کے بعد سے ملک میں صورتِ حال کشیدہ ہے۔ بین الاقوامی خبر رسان اداروں کے مطابق اب تک ہونے والے ہنگاموں میں 6 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔ الیکشن کمیشن کی جانب سے منگل کے روز صدر ویدودود کی کامیابی کا اعلان کیا گیا تھا، جس کے بعد اُن کے حریف امیدوار اور سابق جنرل پرابووو سوبیانتو کے حامیوں نے دارالحکومت جکارتا سمیت کئی شہروں میں مظاہرے شروع کردیے تھے۔ حکام کا کہنا ہے کہ مظاہرین ابتدا میں پُرامن تھے تاہم شام ڈھلتے ہی کئی مقامات پر مظاہرین نے جلاؤ گھیراؤ شروع کردیا تھا جس نے نمٹنے کے لیے پولیس نے آنسو گیس کی شیلنگ اور لاٹھی چارج کیا۔ دارالحکومت جکارتا کے حکام کا کہنا ہے کہ تمام رات جاری رہنے والی ہنگامہ آرائی اور توڑ پھوڑ کے دوران بدھ کی صبح تک 6 افراد کی ہلاکت کی تصدیق ہوچکی ہے۔ گورنر کے مطابق فسادات کے دوران صرف دارالحکومت میں 200 افراد زخمی بھی ہوئے ہیں جبکہ ملک کے کئی دیگر شہروں سے بھی احتجاج اور ہنگامہ آرائی کی اطلاعات مسلسل آ رہی ہیں۔ ذرائع ابلاغ کے مطابق دارالحکومت میں مظاہرین کے سڑکوں پر موجود ہونے کے باعث صورت حال سخت کشیدہ ہے اور وقفے وقفے سے مظاہرین اور پولیس کے مابین مختلف مقامت پر جھڑپیں ہو رہی ہیں۔