ڈنڈا بردار چارجڈ پارکنگ مافیا اور شہریوں میں تصادم کا خطرہ

100

کراچی(اسٹا ف رپورٹر) ضلع وسطی میں ڈنڈا بردارچارجڈ پارکنگ مافیا اور شہریوں میں تصادم کا خطرہ پیدا ہوگیا ہے،ڈی ایم سی کے سروس روڈز پر مافیا نے مکمل کنٹرول حاصل کرلیا،ڈنڈا بردار چارجڈ پارکنگ مافیا خریداری کیلیے آنے والے شہریوں سے لوٹ مار میں مصروف ہوگئے، نارتھ ناظم آباد حیدری ،فائیو اسٹار چورنگی سے کے ڈی اے چورنگی تک دونوں طرف کے سروس روڈ پر مکمل قبضہ کرلیا گیاہے،اندرونی سڑکوں اور مین سڑک پر بھی جرائم پیشہ افراد شہریوں سے من مانی فیس وصول کرنے میں مصروف،ضلع وسطی کے افسران کی مکمل سرپرستی حاصل ہے،شہریوں نے بلدیاتی حکام کی لوٹ مار اور جرائم پیشہ ڈنڈا بردار افراد کی جانب سے ہراسا ںکرنے پر ڈائریکٹر جنرل رینجرز اور ڈی جی نیب سے فوری مدد اور کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔تفصیلات کے مطابق عید الفطر کی آمد سے قبل ضلع وسطی کی مارکیٹوں کے اطراف چارجڈ پارکنگ کے نام پر شہریوں سے کروڑوں روپے لوٹنے کا منصوبہ بنالیا گیا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈی ایم سی وسطی کے علاقے نارتھ ناظم آباد حیدری پری مال شاپنگ سینٹر ،فائیو اسٹار چورنگی سے کے ڈی اے چورنگی تک دونوں اطراف کی سروس روڈ پر چارجڈ پارکنگ مافیا نے قبضہ جمالیا ہے،ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈنڈا بردار چارجڈ پارکنگ مافیا کے کارندوں نے من مانی فیس وصول کیے بغیر شہریوں کی سروس روڈ میں داخلے پر پابندی لگادی ہے جس پر گزشتہ 3روز کے دوران شہریوں اور ان جرائم پیشہ افراد کے مابین شدید تلخ کلامی کے واقعات رونما ہوچکے ہیں۔ذرائع کا کہنا ہے کہ اپنے اہل خانہ کے ہمراہ خریداری کیلیے آنے والے شہریوں کو مذکورہ افراد ہراساں کر کے لوٹ مار میں مصروف ہیں ۔شہریوں کا کہنا ہے کہ مذکورہ افراد نے ڈی ایم سی سینٹرل کی جیکٹس پہن رکھی ہیں جو کہ کھلے عام بدمعاشی کرتے ہوئے شہریوں سے زبردستی من مانی فیس وصول کرنے میں مصروف ہیں جس کے باعث شہریوں میں بھی سخت اشتعال پایا جارہا ہے۔ڈی ایم سی وسطی کے ذرائع کا کہنا ہے مذکورہ چارجڈ پارکنگ کے معاملات ڈی ایم سی کے متنازع افسر اختر رضا چلا رہے ہیں جو کہ ضلع وسطی میں ڈائریکٹر ٹیکسز کے عہدے پر براجمان ہونے کے ساتھ ساتھ میونسپل کمشنر فہیم خان کے کوآرڈی نیٹر کے طور پر بھی امور انجام دے رہے ہیں،علاقہ مکینوں، شہریوں اور مارکیٹ دکانداروں نے موجودہ صورتحال میں شہریوں اور چارجڈ پارکنگ مافیا کے مابین زبردست تصادم ہونے کا خطرہ ظاہر کردیا ہے۔