پارٹی میں اب ”ووٹ کو عزت دو“ کا بیانیہ ہی چلے گا،نواز شریف

169

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد و سابق وزیراعظم میاں محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ پارٹی میں اب ایک ہی بیانیہ ہو گا جو ”ووٹ کو عزت دو“ہو گا۔

مریم نواز اور مسلم لیگ (ن) کے دیگر رہنماؤں نے کوٹ لکھپت جیل میں سابق وزیراعظم نواز شریف سے ملاقات کی۔اس موقع پر نواز شریف نے پارٹی رہنماﺅں سے گفتگو کرتے ہوئے پارٹی قیادت کو اپوزیشن جماعتوں کی آل پارٹیز کانفرنس میں بھرپور شرکت کی ہدایت کی۔

پارٹی رہنماؤں سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیراعظم نواز شریف نے کہا کہ مہنگائی اور گرتی ہوئی معیشت پر مسلم لیگ (ن) عوام کی آواز کے ساتھ آواز بنے، سلیکٹڈ وزیراعظم نے قوم کو جھوٹے خواب دیکھائے، جو چکنا چور ہورہے ہیں، معیشت کی بحالی کےلئے عمران خان اور ان کی ٹیم کے پاس کوئی ایجنڈا نہیں ہے، مسلم لیگ (ن) کے دور میں دہشت گردی کا خاتمہ ہوا اور ملک سے لوڈشیڈنگ ختم ہوئی، ہماری حکومت پاکستان میں سی پیک لے کر آئی اور ملکی معیشت کو اپنے پاﺅں پر کھڑا کیا، لوگ ہماری اور پی ٹی آئی کی حکومت کی پرفارمنس کا تقابلی جائزہ لے رہے ہیں، ہماری حکومت کی کارکردگی عمران خان کی حکومت سے اوپر ہے، احتجاجی تحریک سے پہلے مرکز اور صوبوں میں پارٹی کی تنظیم سازی مکمل کی جائے، پارٹی میں اب ایک ہی بیانیہ ہو گا جو ”ووٹ کو عزت دو“ہو گا۔

نواز شریف نے کہا کہ کچھ دوست پارٹی میں واپسی کےلئے رابطے کر رہے ہیں، مشکل وقت میں بے وفائی کرنے والوں کی مسلم لیگ (ن) میں کوئی جگہ نہیں،اب کسی لوٹے کو پارٹی میں واپس نہیں لیا جائے گا، عمران خان کی حکومت کےلئے مسائل کی جڑ بھی یہی سیاسی لوٹے ہیں، پارٹی تنظیم سازی میں مخلص اور پرانے کارکنوں کو نظر انداز نہ کیا جائے، سفارش کی بجائے میرٹ پر پارٹی عہدے دیئے جائیں۔