عوام کا اتنا تیل نکل گیا ہے کہ ایکسپورٹ بھی ہوسکتا ہے،خورشید شاہ

132

اسلام آباد (صباح نیوز) پیپلزپارٹی کے سینئر رہنما خورشید شاہ نے کہا ہے کہ ڈالر کی قدر بڑھنے سے قرضوں کا حجم بھی بڑھ گیا،عمران خان تیل نکلنے کے دعوے کر رہے ہیں، عوام کا تیل اتنا نکل گیا ہے کہ یہ ایکسپورٹ بھی ہوسکتا ہے، اپوزیشن کے پاس ایک پیج پر ہونے کے سوا دوسرا راستہ نہیں، ہم حالات کی بہتری کی بات کر رہے ہیں حالات خراب کرنے کی نہیں ،حکومت کو چلانا سیاست دانوں کا کام ہے سلیکٹڈ شخص کا نہیں۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خورشید احمد شاہ نیکہا کہ ڈالر کے اوپر آنے سے قرضوں کا حجم بھی بڑھ گیا ہے، ایک طرف عمران خان تیل و گیس نکلنے کے دعوے کرتے رہے، دوسری طرف ان کے مشیر کہتے ہیں کہ 20 کروڑ ڈالر خرچ کر کے بھی کچھ نہیں نکلا لیکن عوام کا تیل اتنا نکل گیا کہ یہ ایکسپورٹ بھی ہو سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پہلے بجٹ آئی ایم ایف کی مشاورت سے بنتا تھا، اب بجٹ آئی ایم ایف خود بنا رہی ہے، یہ تبدیلی ہے، آئی ایم ایف کے ساتھ ہونے والا معاہدہ کوئی نیوکلیئرمعاہدہ نہیں اس لیے معاہدہ پارلیمنٹ میں پیش کیا جائے، اگر معاہدہ پارلیمنٹ میں نہیں لاتے تو اسکا مطلب پارلیمنٹ کو کچھ نہیں سمجھتے۔خورشید شاہ نے کہا کہ معیشت ریاست کی ریڑھ کی ہڈی ہوتی ہے، معیشت کی خراب صورتحال حکومت کی ناکامی ہے، پڑوسی ملکوں کی معیشت بہتر ہوئی گری نہیں، عمران خان نے معیشت کو ایسی جگہ پہنچا دیا جو سب کے لیے چیلنج ہے، اپوزیشن کے پاس ایک پیج پر ہونے کے سوا کوئی راستہ نہیں، موجودہ حالات میں تمام سیاسی جماعتوں کو سر جوڑ کر بیٹھنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ڈالرکی اڑان ملکی معیشت پر ایک بہت بڑی ضرب ہے، اسد عمر اپنی ناکامی کا اظہار کرچکے ہیں، اپنا لگایا ہوا چیئرمین ایف بی آر بھی خود ہی ہٹایا۔