کراچی سرکلر ریلوے منصوبہ 15 روز میں سندھ حکومت کے حوالے کردینگے،شیخ رشید

177
کراچی سرکلر ریلوے کی بحالی کے لیے تجاوزات گرائی جارہی ہیں۔ چھوٹی تصویر میں شیخ رشید پریس کانفرنس کررہے ہیں

کراچی (اسٹا ف رپورٹر) وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے کراچی سرکلر ریلوے چلانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس کو 15روز میں سندھ حکومت کے حوالے کردیں گے‘43 کلو میٹر میں سے 20 کلومیٹر ٹریک خالی کرالیا ہے‘ پٹری کے دونوں طرف50 فٹ تجاوزات تک ختم کرائیں گے ‘ لوگوں سے اپیل ہے کہ وہ خود ریلوے کی زمین خالی کر دیں انہوں نے کہا کہ میئر کراچی بھائی ہے‘ ایم کیو ایم سے اچھے تعلقات رہے ہیں‘ ہمیں(کراچی سرکلر ریلوے)کے سی آر کو ہر قیمت پر چلانا ہے ‘ ایم ایل ون کے لیے جتنی زمین چاہیے وہ حاضر ہے ، ( مین لائن ) ایم ایل ون کو اندرون سندھ سے شروع کریں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیرکو وزیرمنیشن ریلوے اسٹیشن پر پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے ٹرالی پر بیٹھ کر ریلوے افسران کے ہمراہ کراچی سرکلر روڈ کی بحالی کا بھی جائزہ لیا۔ انہوں نے کہا کہ لاڑکانہ اور سندھ کے غریب لوگوں کو کیا ملا ہے؟ بچہ ٹیسٹ کرانے جاتا ہے تو اسے بتایا جاتا ہے کہ تمہیں ایڈز ہوگیا ہے‘ ایک دن سندھ کے ویزے پر پابندی لگ جائے گی‘ سندھ کو ایڈستان بنادیا گیا ہے‘ صوبائی وزیر صحت کو استعفا دینا چاہیے تھا‘ یہ بے شرم لوگ ہیں‘ دنیا میں کوئی اور ہوتا تو مستعفی ہوچکا ہوتا۔ اس موقع پر چیف سیکرٹری سندھ ممتاز شاہ نے کہا کہ کے سی آر اور سی پیک میں سندھ حکومت کا جو کردار ہے وہ نبھائیں گی۔ میئر کراچی وسیم اختر نے کہا کہ سندھ حکومت نااہل ہے‘ کورٹ کے آرڈرز پر حکومت چل رہی ہے ‘ عدالت سے حکم آتے ہیں تو حکومت کام کرتی ہے‘ از خود ان کی گورننس ناکام ہوچکی ہے۔ انہوں نے کہاکہ50 فیصد سے زاید کراچی پرتجاوزات بنی ہیں‘ کچی آبادیوں میں پانی اور بجلی بھی چوری ہوتی ہے‘ ہماری بھی کوشش ہے کہ سرکلر ریلوے بحال ہو۔ وسیم اختر نے کہا کہ ہم مل کر عدالت کے احکامات پر عمل کریں گے ‘عدالت عظمیٰ چاہتی ہے کراچی کے لیے ماسٹر پلان بنایا جائے‘ وفاقی حکومت ہمارا ساتھ دے رہی ہے‘ ہم جلد سے جلد کے سی آر کا روٹ تجاوزات سے خالی کرالیں گے۔