میئر کراچی سرگرم بلدیہ کے 5 افسروں کا تبادلہ و تقررکردیا

105

کراچی ( اسٹاف رپورٹر ) بلدیہ عظمٰی کراچی کے 5 ڈپارٹمنٹس کے سربراہان کے تبادلے و تعیناتی کردیے گئے۔ مجاز اتھارٹی کی منظوری سے جن افسران کو عہدوں سے ہٹایا گیا ان میں سینئر ڈائریکٹر اسٹیٹ تسنیم احمد اور سینئر ڈائریکٹر کچی آبادی صباح الاسلام شامل ہیں۔ جبکہ ان کی جگہ سینئر ڈائریکٹر اسٹیٹ گریڈ 19 کی اسامی پر گریڈ 18 کے افسر عمران قدیر کو بطور اسٹاپ گیپ ارینجمنٹ متعین کیا گیا ہے۔ سینئر ڈائریکٹر کچی آبادی کی حیثیت سے ڈائریکٹر اسٹور مظہر خان کو تعینات کیا گیا ہے اور ان کی جگہ ڈائریکٹر اسٹور اینڈ پروکیور منٹ کی اسامی پر فرید تاجک کو مقرر کیا گیا ہے۔فرید تاجک ڈائریکٹر وہیکل کے طور پر تعینات تھے یہ اسامی ختم کرنے کا فیصلہ کیا جاچکا ہے اس لیے فی الحال اس پوسٹ پر کسی کو تعینات نہیں کیا گیا۔ معلوم ہوا ہے کہ پوسٹ ختم ہونے کے نوٹیفیکشن تک ڈائریکٹر وہیکل کا چارج بھی ڈائریکٹر اسٹور و پروکیورمنٹ فرید تاجک کے پاس ہی رہے گا۔ تسنیم احمد جن کے پاس سینئر ڈائریکٹر اسٹیٹ کے ساتھ ڈائریکٹر ایچ آر ایم کی بھی ذمے داریاںتھیںان کو یہاں سے بھی برطرف کردیا گیا جبکہ اس سے قبل انہیں سینئر ڈائریکٹر ایچ آر ایم کی اہم پوسٹ سے فارغ کرکے ان کی جگہ ظفر راجپوت کو تعینات کیا گیا ہے۔ ظفر راجپوت کو پہلی بار کسی محکمے کی سربراہی دی گئی ہے۔ وہ بلدیہ عظمٰی کے اچھی شہرت کے حامل افسر عبدالرحمن راجپوت کے چھوٹے بھائی ہیں جبکہ عبدالرحمن راجپوت ہیپاٹائٹس سی کے مرض کی وجہ سے طویل عرصے سے رخصت پر ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ میئر وسیم اختر نے مختلف شکایات پر سینئر ڈائریکٹر اینٹی انکروچمنٹ کی اسامی پر قائم مقام کی حیثیت سے متعین بشیر صدیقی کو بھی ہٹانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ان پر مبینہ طور پر غیرقانونی ترقیاں لینے کا الزام ہے جبکہ وہ گریڈ 18 سے 19 گریڈ میں ترقی لینے کی خلاف قانون کوشش کرنے کا بھی الزام ہے۔