قومی انڈر19ٹیم کی کوچنگ کیلیے متبادل کی تلاش

76

کراچی(اسٹاف رپورٹر)قومی انڈر19ٹیم کی کوچنگ کیلئے پی سی بی اور یونس خان میں 4لاکھ روپے کی وجہ سے ڈیڈلاک رہا جسکی وجہ سے بچوں کو عظیم کوچ سے محروم کر دیا۔بھارت میں راہول ڈریوڈ جونیئر ٹیم کی کوچنگ میں خاصے کامیاب ثابت ہوئے تو پاکستان بھی اس تجربے کو دہرانے کا سوچنے لگا، اس ضمن میں یونس خان کو کوچ بنانے کا ارادہ کیاگیا مگرگزشتہ دنوں اطلاعات سامنے آئیں کہ سابق کپتان سے بورڈ کے مذاکرات ناکام ہو گئے ہیں۔ذرائع نے بتایا کہ صرف چار لاکھ روپے کی وجہ سے ڈیڈلاک آیا، پی سی بی یونس خان کو11 لاکھ روپے ماہانہ دینا چاہتا تھا مگر سابق کپتان 15 لاکھ سے کم پر آمادہ نہ ہوئے، ان کے بعض دوستوں نے بھی انھیں ڈٹے رہنے کا کہا، البتہ بورڈ دبائو میں نہ آیا یوں مذاکرات کا سلسلہ ختم ہو گیا، اب حکام کسی اور بڑے سابق کرکٹر کو انڈر19کوچ بنانے کیلیے آپشنز کا جائزہ لے رہے ہیں۔یونس نے کوچنگ کے ساتھ سلیکشن کمیٹی کی ذمہ داری بھی سنبھالنے کا کہا تھا، ان کی ٹیم میں سابق کرکٹرز ارشد خان اور عبدالرزاق کی شمولیت کی بھی اطلاعات زیرگردش تھیں۔ یونس خان سے رابطہ کیا تو انھوں نے کسی قسم کے تبصرے سے انکار کر دیا، ان کے مطابق اس حوالے سے پی سی بی ہی کچھ بتا سکتا ہے، بورڈ کے ترجمان نے بھی رابطے پر تفصیلات بتانے سے گریز کیا۔واضح رہے کہ چند روز قبل میڈیا سے بات چیت میں کرکٹ بورڈ کے ایم ڈی وسیم خان نے یونس خان سے معاملات طے نہ ہونے کی تصدیق کر دی تھی۔