عدالت عظمیٰ کے حکم کے مطابق سرکلر ریلوے بحال کریں گے،شیخ رشید

161

کراچی (اسٹاف رپورٹر) وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ عمران خان کے وعدے پورے نہ ہونے کی ایک وجہ چور اور لٹیروں کا راج ہے‘ عدالت عظمیٰ کے حکم کے مطابق کراچی سرکلر ریلوے بحال کریں گے‘ سرکلر ریلوے کے معاملے پر سندھ حکومت سے بات کریں گے‘ اپوزیشن نے مقابلے کا فیصلہ کیا ہے تو ہم بھی تیار ہیں‘ تحریک چلانا ہر پارٹی کا حق ہے لیکن یہ آزمائے ہوئے اور دو نمبر لوگ ہیں‘ آصف زرداری چاہتے ہیں کہ ان کے ساتھ بھی شہباز شریف والا فارمولا ہو۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی میں صحافیوں کے اعزاز میں دیے جانے والے افطار ڈنر کے موقع پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ عدالت عظمیٰ نے احکامات دیے ہیں کہ15 دن میںکراچی سرکلر ریلوے پر قائم انکروچمنٹ ختم کریں ‘ پیرکے روز کے سی آر پر میٹنگ ہوگی اور سرکلر ریلوے روٹ پر تمام علاقوں کی ٹرالی کرکے جائزہ لیں گے۔ انہوں نے کہا کہ 25 سال بعد کراچی شہر سے کنٹینر بردار ٹرین کا آغاز ہوگا‘ پیرکو پہلی ٹرین کے پی ٹی سے اندرون ملک روانہ ہوگی‘ ہم سے صرف ایک جرم ہوا ہے کہ ہم نے ایم ایل ون میں بہت دیر کردی‘ ایم ایل ون کے انتظار میں4 سال لگا دیے۔ اپوزیشن جماعتوں کے اتحاد پرکڑی تنقید کرتے ہوئے شیخ رشید احمد نے کہا کہ روزہ ایک کا بھی نہیں ہے مگر سارے گندے انڈے افطار پر جمع ہوکر تحریک چلانے کی رٹ لگا رہے ہیں‘ یہ نیک پروین گروپ ہے‘ شریف خاندان اور آصف زرداری کی سیاست کا خاتمہ ہو چکا ہے‘ ن لیگ کی سیاست کا جنازہ نکل جانا ہے‘ ان کو کچھ نہیں ملنے والا‘ عوام کو پتا ہے یہ چور، لٹیرے ہیں‘ شہباز شریف این آر او چاہتے ہیں‘ آصف زرداری بھی یہی چاہ رہے ہیں کہ شہباز شریف والا فارمولا ان کے ساتھ لگایا جائے۔ شیخ رشید احمد کا کہنا تھا کہ گھی، تیل ان ہی چوروں اور ڈاکوؤں کی وجہ سے مہنگا ہوا ہے‘ سب ایک ہی ٹوکری میں جمع ہو گئے ہیں‘ یہ عمران خان کے لیے اچھا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جب تک ریلوے بحال نہیں ہوگی ملک خوشحال نہیں ہوگا‘ اس ملک میں وہ نظام بھی آسکتا ہے کہ یہ دانتوں میں انگلیاں دے کر پچھتائیں گے‘ اس ملک کو خراب معیشت سے خطرہ ہے جس کو بچانے کی ضرورت ہے۔