حکمران سیاسی موت دیکھ کر بوکھلاہٹ کا شکار ہیں‘ مولا بخش چانڈیو

54

کراچی (اسٹاف رپورٹر) پیپلز پارٹی کے مرکزی ترجمان، سینیٹر مولا بخش چانڈیو نے کہا ہے کہ حکمران اپنی سیاسی موت دیکھ کر بے سروپا باتیں اور اپوزیشن پر الزامات عاید کرنے لگے ہیں‘ عجیب و غریب بیانات سلیکٹڈ حکومت کے خوف کی علامت ہیں۔ اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ ایک دعوت افطار کے خلاف بولنا بتا رہا ہے کہ حکومت کے پائوں اکھڑ چکے‘ اب اس حکومت کا بیانیہ نہیں چل سکتا۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان حکومت کے جھوٹ کے ڈھول کا پول کھل چکا ہے‘ حکومت سے وہ انگلی بھی تنگ ہے جس پر اس کا تکیہ تھا‘عوام تنگ آکر نکلیں گے اور وہ انگلی بھی اس حکومت کے کام نہیں آئے گی‘ ملک کو بحران سے نکالنے کے لیے نااہل حکومت سے جان چھڑانے کی اشد ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ جھوٹ کھل چکا ہے اور حکومت کی ساری خوش فہمیاں ختم ہو چکی ہیں‘ عمران خان حکومت نے ملک کو آئی ایم ایف کے پاس گروی رکھ دیا ہے‘آئی ایم ایف نے ایسٹ انڈیا کمپنی کی طرز پر حکومت کے اوپر اپنے لوگ بٹھا دیے ہیں۔ مولابخش چانڈیو نے حکومت کو مشورہ دیا کہ وہ افطار پارٹیوں سے ڈرنے کے بجائے اپنے اعمال ٹھیک کرے‘ جھوٹ اور دھوکے کی یہ حکومت بچ نہیں سکتی‘ حکمرانوں کی بچت اس میں ہے کہ وہ اپنی واپسی کا باعزت راستہ دیکھیں۔