لاڑکانہ ، ماہ رمضان المبارک میں بھی اشیا خورونوش کی قیمتیں کم نہ ہو سکیں

37

لاڑکانہ(نمائندہ جسارت) ماہ رمضان المبارک میں بھی اشیا خورونوش کی قیمتیں کم نہ ہو سکیں۔ پھل اور سبزیوں کی قیمتوں کو پر لگ گئے، آسمان سے باتیں کرنے لگیں، مہنگائی سے ستائے شہریوں کے لیے سندھ حکومت اور ضلع انتظامیہ بھی بچت بازار کا انعقاد کرنے میں مکمل ناکام ہو گئی۔ تفصیلات کے مطابق ڈالر کی اونچی اڑان سے اشیا صرف عوام کی پہنچ سے دور ہو گئیں، شہری پریشان ہیں سندھ حکومت اور ضلع انتظامیہ بھی شہریوں کو ریلیف دینے میں مکمل ناکام دکھائی دیتی ہے اب تک رمضان بچت بازار بھی قائم نہیں کیے جا سکے ہیں، یہ ہی وجہ ہے کہ عام مارکیٹ میں سیب چار سو، آلو بخارا چار سو، آم دو سو، خوبانی تین سو، خربوزہ سو، فالسہ ڈھائی سو، آڑو ساڑھے تین سو، کھجور تین سو ساٹھ اور موسمی 190 روپے کلو فروخت ہورہے ہیں سبزیوں میں بند گوبی ایک سو ساٹھ، ادرک دو سو، لیموں ساڑھے تین سو، کریلا اسی، بھنڈی ستر روپے کلو میں فروخت ہو رہی ہیں اور شہری مہنگے داموں خریدنے پر مجبور ہیں۔ شہریوں نے انتظامیہ سے اشیا خورونوش کے سستے داموں فراہمی کے لیے فوری بچت بازار قائم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔