حکمرانوں کے پاس معیشت کی بہتری کا کوئی روڈ میپ نہیں،حافظ نعیم

66

کراچی(اسٹاف رپورٹر) امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے کہا ہے کہ حکمرانوں کے پاس عوامی مسائل کے حل اور معیشت کی بہتری کا کوئی روڈ میپ نہیں، معاشی بحران سے نکلنے کے لیے سودی معیشت کا خاتمہ ضروری ہے ، مسائل سے نجات اور انصاف کی فراہمی صرف اسلام کے عادلانہ و منصفانہ نظام کے قیام سے ہی ممکن ہے، آئی ایم ایف عالمی سامراجی و شیطانی قوتوں کا منظم نیٹ ورک ہے، جس کا مقصد ہمیں غلام بنانا ہے ،حکمران وعدے تو بہت کرتے ہیں ، لیکن عالمی مالیاتی اداروں کے آگے سجدہ ریز ہو جاتے ہیں ، آئی ایم ایف سے مذاکرات میں نصاب تعلیم سے قرآنی آیات نکالنے ، ختم نبوت و توہین رسالت کے قوانین میں ترمیم کرنے اور عوام پر ٹیکسوں اور مہنگائی میں اضافہ کرنے کی بات کی گئی ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جماعت اسلامی علاقہ گارڈن و شومارکیٹ کے تحت ایک عوامی دعوت افطار سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ دعوت افطار سے ناظم علاقہ فیصل میمن نے بھی خطاب کیا ۔ اس موقع پر ناظم علاقہ برنس روڈ و کیماڑی محمد ذیشان بھی موجود تھے۔ حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ موجودہ حکمران بھی ماضی کے حکمرانوں کی طرح طرز عمل اختیار کیے ہوئے ہیں، حکومت میں آنے سے قبل بہت دعوے اور وعدے کرتے تھے کہ پیٹرول 50 سے 60 روپے فی لیٹر کر دیں گے ، آئی ایم ایف سے قرضے لینے سے بہتر ہے کہ خود کشی کرلی جائے لیکن آج عملاً صورتحال یہ ہے کہ پیٹرول 108 روپے لیٹر ہوگیا ہے ،آئی ایم ایف سے قرضے بھی لیے جا رہے ہیں ، جو پہلے ماضی کے قرضوں اور اس کے سود کی کی ادائیگی کے لیے خرچ ہوں گے ، پھر ان قرضوں کو اتارنے کے لیے نئے قرضے لیے جائیں گے اور یہ سلسلہ اسی طرح چلتا رہے گا ، عوام غربت ، مہنگائی ، بے روز گاری اور دیگر مسائل کے عذاب میں مسلسل مبتلا رہیں گے ۔ حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ ان حالات سے نجات کے لیے ضروری ہے کہ ہم دین کے اجتماعی نظام کو اختیار کریں، قرآن کے علم اور اس کے نفاذ کی تحریک سے وابستہ ہوں ، قرآن کتاب ہدایت اور کتاب انقلاب ہے ، اس کو تھامنے اور اسے نافذ کرنے سے ہی حالات بدلیں گے، رمضان المبارک کا بھی یہ پیغام ہے کہ ہم قرآن سے جڑ جائیں اور اسے اپنا قائد اور امام بنائیں۔حافظ نعیم الرحمن نے کہاکہ سندھ باب الاسلام ہے ،10 رمضان المبارک کو محمد بن قاسم راجا داہر کے ظلم کی شکارایک مظلوم بیٹی کی فریاد پر اس کی دادرسی کے لیے آئے تھے ، یوم باب الاسلام ظالمانہ نظام کے خلاف جدوجہد کا پیغام دیتاہے ، محمد بن قاسم نے اپنے اخلاق و کردار سے سندھ کے عوام کے دل جیت لیے اور یہیں سے پورے برصغیر میں اسلام کی روشنی پھیلی ،سندھ کے عوام آج بھی محمد بن قاسم کو یاد کرتے ہیں ۔